ہر گھر کو بجلی گھر بنانے والا ’’شمسی رنگ‘‘ ایجاد

7

آسٹریلیا کے رائل ملبورن انسٹی ٹیوٹ آف ٹیکنالوجی (آر ایم آئی ٹی) کے ماہرین نے دیواروں کے لیے ایک ایسا رنگ تیار کر لیا ہے جو انہیں بجلی پیدا کرنے کے قابل بھی بنا سکتا ہے۔

’’شمسی رنگ‘‘ (سولر پینٹ) کہلانے والے رنگ میں مروجہ روغن کے اہم جزو ٹیٹانیم آکسائیڈ کے ساتھ مصنوعی مولبڈینم سلفائیڈ بھی شامل کیا گیا ہے۔ ان دونوں اجزاء کے ملاپ سے تیار ہونے والا رنگ ایک طرف ہوا میں موجود پانی کے بخارات جذب کرنے کی صلاحیت رکھتا ہے تو دوسری جانب یہ سورج کی روشنی بھی جذب کرتے ہوئے پانی کے سالمات کو ہائیڈروجن اور آکسیجن میں توڑتا ہے جنہیں بعد ازاں آپس میں ملا کر بجلی پیدا کی جا سکتی ہے۔

اس رنگ کی افادیت اجاگر کرنے کے لیے آر ایم آئی ٹی نے اپنی ویب سائٹ پر ایک تفصیلی فیچر شائع کیا ہے جبکہ یوٹیوب پر ایک ویڈیو بھی جاری کی ہے:

البتہ یہ رنگ اور اس سے وابستہ نظام ابھی اپنی ابتدائی شکل میں ہیں جنہیں مزید پختہ کرکے قابلِ استعمال بنانے میں پانچ سے چھ سال لگ جائیں گے۔ تاہم اس ٹیکنالوجی کے مرکزی تحقیق کار ٹاربن ڈائنیکے کہتے ہیں کہ اپنی تکمیل کے بعد یہ ایک کم خرچ اور مفید نظام ثابت ہوگا جس کا براہِ راست فائدہ غریب ممالک میں دور افتادہ بستیوں کو پہنچے گا۔

یہ خاص طور پر ایسے علاقوں کے لیے مفید ہے جہاں کا موسم زیادہ تر گرم اور مرطوب رہتا ہے یعنی وہاں گرمی کے ساتھ ساتھ ہوا میں نمی بھی مناسب رہتی ہے۔ تاہم یہ کم نمی والی ہوا میں بھی بخوبی کام کرسکتا ہے۔