آئی ایم ایف نے پاکستان پر کونسی مشکل شرائط مسلط کر دیں ہیں ؟ حکومت ناکام ہوئی تو پاکستان میں کیا ہو جائے گا ؟ تہلکہ خیز انکشافات

32

کراچی(این این آئی)ماہر معاشیات ڈاکٹر حفیظ پاشا نے کہا ہے کہ آئی ایم ایف نے اس بار بہت مشکل اہداف دیئے ہیں اگر حکومت ناکام ہوئی تو برآمدات میں23فیصد کمی لانا پڑے گی اور شرح نمو تو بالکل ہی رک جائے گی۔خصوصی گفتگوکرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ خسارے کو2.4 سے کم کرکے 0.6 تک لانا ناممکن ہے۔وزارت خزانہ کی صلاحیت محدود ہے، حکومت ٹیکس میں 36 فیصد تک اضافہ نہیں کرسکتی۔انہوں نے کہاکہ آئندہ بجٹ میں 700ارب کے نئے ٹیکسز لگائے جائیں گے اور روپے کی قدر میں بھی کمی آسکتی ہے جس کے باعث کرنٹ خسارہ مزید بڑھے گا۔ڈاکٹر

حفیظ پاشا نے کہا کہ حکومت کو اپنے خرچے کم کرنے پڑیں گے بصورت دیگر اہداف حاصل نہیں ہوں گے۔انہوں نے کہاکہ اگر ایف بی آر36 فیصد سے زائد ٹیکس بڑھا لے تو بڑی بات ہوگی لیکن حقیقت یہ ہے کہ حکومت بڑی مشکل سے 25 فیصد بڑھا سکے گی۔انہوں نے کہا کہ آئی ایم ایف کو بھی معلوم ہے کہ حکومت پاکستان اتنا ٹیکس جمع نہیں کرسکتی۔ڈاکٹرحفیظ پاشانے کہاکہ حکومت 400ارب پر چلتی ہے جس میں سے 200ارب کی تنخواہیں اور باقی دیگر اخراجات ہیں جو آپ کسی صورت کم نہیں کرسکتے۔