پاکستان میں دہشت گردوں کی کوئی محفوظ پناہ گاہیں نہیں، سربراہ پاک فوج

2

آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کا کہنا ہے کہ پاکستان میں دہشت گروں کی اور افغانستان کے خلاف استعمال ہونے والی خفیہ پناہ گاہیں نہیں جب کہ پاکستان ہر رنگ و نسل کے دہشت گردوں کے خلاف آپریشن کررہا ہے۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے مطابق آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ سے افغان میڈیا کے 9 رکنی وفد نے ملاقات کی جس میں انہوں نے پاک افغان سرحد پر موثر بارڈر مینجمنٹ پر زور دیا جب کہ افغان میڈیا وفد نے آرمی چیف کا وقت دینے اور اہم تبادلہ خیال پر شکریہ ادا کیا، وفد کا کہنا تھا کہ ایسا تبادلہ ایک دوسرے کو سمجھنے کے لیے ضروری ہے جب کہ دورہ پاکستان کے بعد مثبت تاثر لیکر واپس جائیں گے۔

اس موقع پر پاک فوج کے سربراہ کا کہنا تھا کہ پاکستان نے سرحد پر باڑ، نئی چوکیوں کے قیام سمیت موثر اقدامات اٹھائے، افغانستان ہمارا ہمسایہ اور بھائی ملک ہے جب کہ دہشت گرد ہمارا مشترکہ دشمن ہے لہذا الزام تراشی کے بجائے دشمن کے خلاف بااعتماد رابط کی ضرورت ہے جب کہ میڈیا مخالف قوتوں کے منفی تاثر کو کم کرنے میں کردار ادا کرسکتا ہے۔  پاکستان میں دہشت گردوں کی کوئی محفوظ پناہ گاہیں ہیں اور نہ افغانستان کے خلاف استعمال ہونے والی خفیہ پناہ گاہیں جب کہ پاکستان ہر رنگ و نسل کے دہشت گردوں کے خلاف آپریشن کررہا ہے۔