نیب ایگزیکٹو بورڈ اجلاس؛ شریف خاندان اور اسحاق ڈار کیخلاف ریفرنسز منظور

6

نیب ایگزیکٹو بورڈ نے شریف خاندان کے خلاف 3 اور اسحاق ڈار کے خلاف ایک ریفرنس کی منظوری دیدی ہے۔

فلک نیوز کے مطابق نیب ایگزیکٹو بورڈ کا اہم اجلاس چیئرمین نیب قمر زمان چوہدری کی صدارت میں ہوا، ذرائع کے مطابق نیب ایگزیکٹو بورڈ کے اجلاس میں 4 ریفرنس پیش کیے گیے جس کی بورڈ نے منظوری دیدی ہے، منظور کیے گئے ریفرنسز میں شریف خاندان کے خلاف 3 اور اسحاق ڈار کے خلاف ایک ریفرنس شامل ہیں۔ نیب نے چاروں ریفرنس سپریم کورٹ کے فیصلے پر عملدرآمد کرتے ہوئے تیار کیے ہیں۔

اجلاس کے بعد جاری اعلامیہ میں کہا گیا ہے کہ جولائی 2017کے سپریم کورٹ کے پاناماکیس کے فیصلے کے تناظر میں نیب ایگزیکٹو بورڈ کا اجلاس ہوا جس میں راولپنڈی اور اسلام آباد کی احتساب عدالتوں میں ریفرنس دائر کرنے کافیصلہ کیاگیا۔

اعلامیہ میں کہا گیا ہے کہ جے آئی ٹی کی رپورٹ پر مہیاکردہ مواد پر نیب کی تحقیقاتی ٹیم نے ریفرنس تیارکیے جس میں نوازشریف اور ان کے خاندان کے خلاف 3 ریفرنس دائر کرنے کی منظوری دی گئی، ایک ریفرنس ایون فیلڈ پراپرٹیز پارک لین لندن میں فلیٹ نمبر 16 اور 16 اے ، دوسرا 17 اور 17 اے، دوسرا ریفرنس جدہ میں ہل میٹل کمپنی اورعزیزیہ اسٹیل کمپنی سے متعلق دائرکرنے کی منظوری دی گئی۔ فلیگ شپ انوسٹمنٹ لمیٹڈ و دیگر 15 کمپنیوں سے متعلق تیسرا جب کہ چوتھا ریفرنس اسحاق ڈار کے آمدن سے زائد اثاثہ جات سے متعلق دائر کرنے کی منظوری دی گئی ۔

نیب کی جانب سے جاری اعلامیہ میں کہا گیا ہے کہ چیئرمین نیب قمرزمان چوہدری نے مقررہ وقت میں ریفرنس کی تکمیل پر لاہور اور راولپنڈی نیب کی تحقیقاتی ٹیمز کی کارکردگی کو سراہا اور پراسیکیوشن کو احتساب عدالتوں میں بھرپور طریقے سے مقدمات لڑنے کی ہدایت کی۔

واضح رہے کہ شریف فیملی اور اسحاق ڈار کے خلاف پاناما ریفرنسز عدالت بھجوانے کے لئے نیب ایگزیکٹو بورڈ کا اجلاس گزشتہ دن ہونا تھا تاہم ناگزیر وجوہات کی بنیاد پر اجلاس ایک دن کے لیے ملتوی کردیا گیا تھا۔