پاکستانی فلم ساون آسکرایوارڈ میں نامزدگی کے لئے منتخب

17

نئی نسل کے فلم میکرز کی حوصلہ افزائی ہوگی،شرمین عبیدچنائے،ساون فنی اعتبار سے متاثرکن ہے،ندیم مانڈوی والا،عاصم رضا

کراچی(فلک نیوز) ہدایتکا ر فرحان عالم اور فلمساز و رائٹر مشہودقادری کی منفرد تخلیقی کاوشیں رنگ لے آئیں ، پاکستانی فلم ساون آسکر ایوارڈ میں نامزد گی کیلئے منتخب کر لی گئی ۔ مذکورہ فلم گزشتہ روز نمائش کیلئے پیش کی گئی تھی ،دی اکیڈمی آف موشن پکچرز آرٹس اینڈ سائنسز یو ایس اے کی قائم کردہ پاکستان اکیڈمی سلیکشن کمیٹی کی آسکر ایوارڈ یافتہ فلمساز و ہدایتکارہ شرمین عبید چنائے کی سربراہی میں 9رکنی کمیٹی نے پاکستانی فلمسازوں سے آسکر ایوارڈ برائے فارن لینگوئج مووی کیلئے 90 ویں اکیڈمی ایوارڈ کیلئے فلمیں طلب کی تھیں ۔ پاکستان اکیڈمی سلیکشن کمیٹی میں شرمین عبید چنائے سمیت پاکستانی فلموں کو آسکر ایوارڈکیلئے منتخب کرنیوالوں میں جرجیس سیجا ، ندیم مانڈوی والا ، عاصم رضا ، مومنہ درید، طلعت حسین، سکینہ سموں ، رضوان بیگ، محمد حنیف اورعلی حمزہ شامل تھے جنہوں نے خفیہ رائے شماری سے فلم کا انتخاب کیاجس کو اکیڈمی ایوارڈ کی اہلیت کے مطابق اکیڈمی ایوارڈ2017 کیلئے بھیجا جائیگا جس میں80 سے زائد ممالک میں بنائی گئی اپنے اپنے ممالک سے منتخب کی گئی فلموں کو شامل کیا جائیگا 5 غیر ملکی زبان کی نامزد ہونیوالی فلموں کا انتخاب 23 جنوری 2018 کو کیا جائیگا۔ آسکر ایوارڈ کی رنگا رنگ تقریب 4 مارچ 2018 میں ہوگی۔پاکستان اب تک 5بارنامزدگی حاصل کرچکا ہے ۔ شرمین عبید چنائے نے نامزد ہونیوالی فلم ’’ساون ‘‘ کے منتخب ہونے پر اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ بالآ خر پاکستان اس سال بھی آسکر ایوارڈ میں پہنچ گیا جس سے میر اسر فخر سے بلند ہوگیا ہے ،بظاہر یہ ایک چھوٹا قدم ہے لیکن اس سے نئی نسل کے فلم میکرز کی حوصلہ افزائی ہوگی ،نامزد فلم کے ہدایتکار فرحان عالم نے کہا ہماری کاوشوں کو دنیا کے سب سے بڑے فلمی ایوارڈ کیلئے نامزد کیا جانا ہمارے لئے کسی اعزاز سے کم نہیں ، کمیٹی کے رکن علی حمزہ نے کہا اس سے پاکستانی فلم انڈسٹری میں سرگرم اور نئے آنیوالے فلم میکرز کو منفرد اعزاز ملے گا۔ ندیم مانڈوی والا اور عاصم رضا نے کہا ’’ساون‘‘ فنی اعتبار سے نیچرل اور متاثر کن فلم ہے ۔