لاہور-ناموس رسالت کاتحفظ کرناہرمسلمان کی ذمہ داری اور مذہبی فریضہ ہے۔عالمی مجلس تحفظ ختم نبوت

26

قادیانی عوام قادیانی عقائد کو جاننے اورانکی کتابوں کے مطالعہ کے بعدقادیانیت سے متنفر ہو کرجوق در جوق اسلام میں داخل ہو رہے ہیں
مقررین کا تاریخی عظیم الشان ختم نبوۃ ،تحفظ ناموس رسالت سیمینار سے خطاب
لاہور(فلک نیوز ) عالمی مجلس تحفظ ختم نبوت لاہورکے زیر اہتمام سالانہ تاریخی عظیم الشان ختم نبوۃ و تحفظ نامو س رسالت سیمینار میرج ہٹ شادی ہال وحدت روڈ لاہور میں منعقد ہوا ، سیمینار کی صدارت عالمی مجلس تحفظ ختم نبوت کے مرکز ی رہنمامولانا اللہ وسایا نے کی ۔سیمینارمیں ملی یکجہتی کونسل کے مرکزی عہدیداران اور مختلف شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والے امت کے تمام طبقات نے بھرپور انداز میں شرکت کی ، کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے مقررین نے کہا کہ عقیدہ ختم نبوت اور ناموس رسالت کا تحفظ ہرمسلمان کی ذمہ داری اورمذہبی فریضہ ہے۔تمام مسلمانوں کو اسلام اور عقیدہ ختم نبوت کے تحفظ کے لیہے جذبہ صدیقی سے سرشار ہوکرمیدان عمل میں نکلنا ہوگا۔قادیانی ایک سازش کے تحت3 197 ء کا دستورختم کرا کرخود کو پھر سے مسلمان تسلیم کرانا چاہتے ہیں ۔حکمرانوں نے اسلام ،مسلمان اور پاکستان کے خلاف قادیانیوں کی سازشوں سے نہ صرف آنکھیں بند کر رکھی ہیں بلکہ انکی سرپرستی کر رہے ہیں قوم اور حکمرانوں کو اس بات سے آگاہ رہنا چاہیے کہ قادیانی اسلام، مسلمان اور پاکستان کے لیے یہود وہنود سے بھی زیادہ خطرناک ہیں ۔ کانفرنس میں عالمی مجلس تحفظ ختم نبوت کے مرکزی رہنما شاہین ختم نبوت مولانا اللہ وسایا ،جماعت اسلامی کے مرکزی سیکرٹری جنرل لیاقت بلوچ،جمعیہ اہلحدیث کے مرکزی رہنما مولانا سید ضیاء اللہ شاہ بخاری،شیخ الحدیث مولانا عبدالمالک،تنظیم اسلامی کے امیرحافظ عاکف سعید،پیرعبدالرحیم نقشبندی،لال مہدی،مولانا عبدالرحمن،مفتی شیرمحمدعلوی،مولانا نعیم اللہ فاروقی،قاری علیم الدین شاکر،مولانا خورشیدعالم، مولانا سید ضیا ء الحسن شاہ ،قاری جمیل الرحمن اختر، پیر رضوان نفیس ، عالمی مجلس کے مرکزی راہنما مولانا عزیز الرحمن ثانی ،مولانا محمدقاسم گجر ، مولانا عبد النعیم،قاری عبدالعزیز ، قاری عبدالعزیز،مولانا قاری محمدمعاویہ مکی،مولانا غضنفرعزیز،مولانا عبدالرحمن،حافظ محمدنعمان حامدمولانا اسلم ندیم، سمیت متعدد دینی ومقتدر شخصیات نے شرکت و خطاب کیا۔ کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے عالمی مجلس تحفظ ختم نبوت کے مرکزی رہنما ء شاہین ختم نبوت مولانا اللہ وسایا نے کہا کہ اندرون ملک وبیرون ممالک کی کئی عدالتوں نے قادیانیت کے کفر پر مہر ثبت کردی ہے اسرائیل اور مرزائیل دونوں کو کامیاب نہیں ہونے دیں گے قادیانیت اپنے منطقی انجام کو پہچنے والی ہے،قادیانی فتنے کا خاتمہ قریب ہے،ایک وقت آئے گا کہ تلاش کرنے باوجود اس دھرتی پر ایک بھی قادیانی نہیں ملے گا۔ لیاقت بلوچ نے کہا کہ عقیدہ ختم نبوت کا دفاع دراصل اسلام کا فاع ہے،قادیانی جہاں بھی جائیں گے ان کا مقابلہ دلائل اور براہین سے کیا جائے گاانہوں نے کہا کہ عقیدۂ ختم نبوت کا دفاع کرنے والے ہر وقت اسلام کی افضل ترین عبادت میں مصروف ہیں۔حافظ عاکف سعیدنے کہا کہ قادیانی ختم نبوت کی انکار کی وجہ سے دائرہ اسلام سے خارج ہیں۔ختم نبوت کا تحفظ در اصل آپ ﷺ کی ذات اقدس کا تحفظ ہے۔۷ستمبر کا دن عالم اسلام کے مسلمانوں کے لیے یوم فتح مبین ہے،یہ دن عاشقان رسول ﷺ ،ختم نبوت کے پروانوں کے لیے عظیم الشان کامرانی اور تحفظ ختم نبوت کے حوالے سے تجدید عہد کا دن ہے۔پیرعبدالرحیم نقشبندی نے کہا کہ آج ایک مرتبہ پھر ختم نبوت اور قادیانیت کے متعلق قوانین اور ناموس رسالت کے خلاف سازشیں کی جارہی ہیں ۔ان اسلام دشمن قوتوں کی اس سازش کو کامیاب نہیں ہونے دیں گے۔عقیدہ ختم نبوت وناموس رسالت کی حفاظت کرنے میں کسی قسم کی قربانی سے دریغ نہیں کریں گے۔علماء کرام نے ۱۹۷۴ کی تحریک میں حصہ لینے والی تمام جماعتوں ،حزب اقتدار اور حزب اختلاف اور تمام دینی قوتوں کے اس دلیرانہ فیصلے پرخراج تحسین پیش کیا۔علماء کرام نے حکومت سے مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ قادیانیوں کو آئین وقانون اور پاکستان کی نیشنل اسمبلی کے فیصلے کا پابند بنائے اور ان کی غیر قانونی سرگرمیوں کانوٹس لے۔شناختی کارڈ میں مذہب کا خانہ شامل کیا جائے۔۔مولانا عزیزالرحمن ثانی نے کہا کہ قادیانیت کا فتنہ یورپی ممالک کا تربیت یافتہ ، اسرائیل کا ایجنٹ اور صہیونی قوتوں کے مفادات کیلئے پیدا کیا گیا ہے، انہوں نے کہا کہ قادیانیت کا وجود ننگ انسانیت و ملت اسلامیہ کیلئے ناسور اور اسلام وایمان کیلئے زہر قاتل ہے۔لال مہدی نے کہا کہ شہداء ختم نبوت نے اپنی جانوں کا نذرانہ پیش کرکے ہمیشہ گلشن رسالت کی آبیاری اور ناموس رسالت کے چراغ کو روشن کیا ہے۔مولانا علیم الدین شاکرنے کہا کہ قادیانی گروہ اسلام کا ٹائٹل استعمال کرکے اپنے کفرو ارتداد کو اسلام بناکر پیش کررہا ہے، اسلامیان پاکستان قادیانی فتنہ اور باطل قوتوں کی سرکوبی کیلئے پر امن جدوجہد جاری رکھیں۔ممولانا عبدالنعیم نے کہا کہ فتنے سے امت مسلمہ کو بچانا ہم سب کی ذمہ داری ہے۔حرمت رسول ﷺ کے تحفظ کا فریضہ سرانجام دینا دنیوی واخروی نجات کا سبب اور ذریعہ ہے قادیانی اسلامی عقائد میں تحریف کرکے سادہ لوح مسلمانوں کی آنکھوں میں دھول جھونک رہے ہیں۔