لندن میں نون لیگ کی بیٹھک، شہباز شریف کو وزیر اعظم بنانے پر غور: ذرائع

11

لندن نون لیگ کی سیاست کا گڑھ، حسن نواز کے دفتر میں بیٹھک، شہباز شریف کو مستقل وزیر اعظم بنانے پر غور، ذرائع کا دعویٰ، شاہد خاقان عباسی نے میڈیا سے مختصر گفتگو میں کہا کہ پارٹی صدارت پر بات نہیں ہوئی، این اے ایک سو بیس میں جمہوریت کی فتح ہوئی، بیگم کلثوم نواز کا ابھی علاج ہو رہا ہے۔

لندن: (فلک نیوز) برطانوی دارالحکومت لیگیوں کا گڑھ بن گیا ہے۔ بدیس میں دیس کے فیصلے ہونے لگے ہیں۔ سابق وزیر اعظم نواز شریف کی ہدایت پر لیگی قائدین نے لندن کا رخ کر لیا ہے۔ وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی جو امریکہ کے دورے پر تھے، گزشتہ رات لندن پہنچے۔ شہباز شریف نے بھی آج قومی ایئر لائن کی پرواز پی کے سیون فائیو سیون سے برطانیہ کے لئے اڑان بھر لی ہے اور کچھ ہی دیر میں لندن پہنچ جائیں گے۔ وزیر خارجہ خواجہ آصف، وزیر خزانہ اسحاق ڈار، مریم نواز، کیپٹن ریٹائرڈ صفدر اور دیگر رہنماء پہلے ہی سے لندن میں موجود ہیں جہاں لیگی رہنماء سر جوڑ کر بیٹھے ہیں اور اہم فیصلے کر رہے ہیں۔ آج حسن نواز کے دفتر میں ہونے والی اہم بیٹھک میں عدالتی کیسز، پارٹی صدارت اور ملکی سیاسی صورتحال سے متعلق اہم فیصلے ہوئے۔ تاہم ذرائع کا کہنا ہے کہ شہباز شریف کے لندن پہنچنے کے بعد اگلے چوبیس گھنٹے میں نون لیگ کے بڑوں کی ایک اور اہم بیٹھک متوقع ہے جس میں اہم فیصلوں کو حتمی شکل دی جائے گی۔ ذرائع نے یہ دعویٰ بھی کیا ہے کہ وزیر خزانہ اسحاق ڈار آئندہ چند روز میں وزیر اعظم کو اپنا استعفیٰ بھجوا دیں گے اور وطن واپس نہیں آئیں گے جبکہ میاں نواز شریف اگلے تین سے چار ماہ لندن ہی میں رہیں گے۔ دوسری جانب بیگم کلثوم نواز کے متعلق بھی ذرائع کا دعویٰ ہے کہ وہ آئندہ چار سے چھ ماہ سفر نہیں کر سکیں گی جس کے باعث شاید این اے 120 کا الیکشن دوبارہ کرانا پڑے اور امکان ہے کہ یہ الیکشن شہباز شریف لڑیں گے اور پھر انہیں قومی اسمبلی سے وزیر اعظم منتخب کروایا جائے گا۔