جھنگ- امام عالی مقام حضرت امام حسینؓ کا دنیا میں سب سے بڑا عرس شروع ہو گیا، مرکزی تقریب9 محرم کو ہو گی

16

جھنگ- (فلک نیوز) – ،سید الشہداء امام عالی مقام حضرت امام حسینؓ کا عرس مبارک ضلع جھنگ میں واقع دربار حضرت سخی سلطان باہوؒ پر شروع ہو گیا۔ دنیا بھر سے زائرین ۷اور عقیدتمندوں کی بڑی تعدادعرس میں شرکت کیلئے پہنچ گئی ۔ ٹی این این کے سروے کے مطابق حضرت امام حسین ؒ کے عرس کے نام سے منسوب یہ دنیا میں سب سے بڑی تقریب ہے۔ عرس کا آغاز یکم محرم سے ہوتا ہے اور بغیر کسی تعطل کے 10محرم الحرام تک جاری رہتا ہے۔ اس دوران کئی مربع ایکڑ اراضی خالی کرا لی جاتی ہے جس پر زائرین کی گاڑیوں کی پارکنگ ، لنگر خانے ، بیت الخلاء اور عارضی کیمپ لگا دیئے جاتے ہیں۔ عرس میں یورپ، امریکہ ، خلیجی ریاستوں اور دنیا کے دیگر ممالک سے لاکھوں کی تعداد میں زائرین شرکت کرتے ہیں۔یہاں یہ امر قابل ذکر ہے کہ کئی مربع ایکڑ پر پھیلے رقبہ پر جاری عرس کی تقریبات میں غیر شرعی مشاغل یعنی ڈھول ڈھمکا، سرکس وغیرہ کی اجازت نہیں دی جاتی۔ لاکھوں لوگ تلاوت کلام پاک، نعت خوانی، منقبت گوئی اور ذکر و اذکار میں مشغول ہوتے ہیں۔ عرس کی مرکزی تقریب آستانہ حسنؒ پر منعقد ہوتی ہے جو اس سال اس لحاظ سے بھی انتہائی اہمیت اختیار کر گئی ہے کہ اس موقع پر حضرت سلطان باہوؒ ٹرسٹ کے زیر اہتمام بیس ایکڑ اراضی پر قائم کی گئی مسجدِ حسین فیز 1کا افتتاح بھی کیا جائے گا۔مسجدِ حسین میں 10ہزار نمازیوں کے بیک وقت نماز پڑھنے کی گنجائش کے ساتھ ساتھ 10ہزار طلباء کے قیام اور تعلیم کا اہتمام بھی کیا گیا ہے۔ مسجدِ حسین دنیا کی واحد مسجد ہے جس کے صحن میں دینی مدرسے، انگلش میڈیم سکول، یونیورسٹی اور آرفن کیئر سنٹر قائم کئے گئے ہیں۔ اس سارے نظام کی نگرانی دنیا بھر میں خدمت دین اور خدمت خلق کے علمبردار عالمی مبلغ اسلام صاحبزادہ پیر سلطان فیاض الحسن سروری قادری کر رہے ہیں جو دورِحاضر میں مشائخ اور آستانوں کیلئے ایسی مثال قائم کر رہے ہیں جس کی نظیر ملنا مشکل ہی نہیں ناممکن بھی ہے۔ پیر صاحب یورپ کے کفر سے اٹے معاشرے میں نورِ ایمان کی شمع فروزاں کرنے میں جس جانفشانی اور محنت سے کام کر رہے ہیں اس پراپنے تو اپنے بیگانے بھی تعریف کرنے پر مجبور ہیں۔آپ کی نگرانی میں چلنے والے سینکڑوں اسلامک سنٹرز، اسلامی تعلیمات کے فروغ کیلئے مسلسل کوشاں ہیں۔ تبلیغ دین کیلئے دن رات مشغول رہنے والے پیر سلطان فیاض الحسن قادری مشائخ علماء کونسل پاکستان کے سربراہ بھی ہیں اور حضرت سلطان باہوؒ ٹرسٹ کے پلیٹ فارم سے سماجی خدمات کا بیڑہ بھی اٹھائے ہوئے ہیں جس پر ان کی خدمات کے اعتراف میں انہیں صدارتی ایوارڈ سے بھی نوازا جا چکا ہے۔