حکومت نے ختم نبوت صلی اللہ علیہ وسلم میں ترمیم کر کہ غیر آئینی اقدام کیا. مولانا احمد لدھانوی

9

گلیانہ( ڈاکٹر انصر فاروق)مسلم لیگ ن اداروں سے ٹکراؤ کی پالیسی پر گامزن ہے جو کہ ملکی مفاد میں ہر گز نہیں ان خیالات کا اظہار ملک گیر مذہبی وسیاسی جماعت راہ حق کے مرکزی راہنما مولانا احمد لدھانوی نے کوٹلہ ارب علی خاں میں میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے صحافیوں کے سوالوں کے جوابات دیتے ہوئے کہا اس وقت ملک پاکستان شدید خطرات سے دو چار ہے ، حکومت کو چاہیے کہ وہ اداروں کیساتھ ٹکراؤ پالیسی اختیار نہ کریں ،حکومت اور عدلیہ دو اداروے ہمارے ملک کے قابل احترام ادارے ہیں ،فوج ہمارے ملک کی سرحدوں کی حفاظت کر رہی ہے جبکہ عدلیہ ملک کے اندر عوام کو انصاف دینے کیلئے کوشاں ہے ، ختم بنوت ﷺ کے سوال کے جواب میں مولانا احمد لدھانوی نے کہا کہ حکومت نے ختم نبوت ﷺ میں ترمیم کر کہ غیر آئینی اقدام کیا ،آخر حکومت کی طر ف سے اس غیر آئینی ترمیم کو واپس لیا گیا ، حکومت نے ایک بار پھر عدلیہ پر حملہ کیا ہے وزیر حارجہ نے امریکہ میں قادیانیوں کے سرابرہ سے ملاقات کی ہے اور وزیر قانون رانا ثناء اللہ کا بیان کہ قادیانی بھی مسلمان ہیں وہ قابل مذمت ہے حکومت نے نااہل اور جاہلوں کو اہم ذمہ داریاں سونپ رکھی ہیں جو بغیر سوچے سمجھے بیانات دے رہے ہیں جو قابل افسوس ہیں ،انشاء اللہ جنرل الیکشن 2018میں بھر پور سیاسی طاقت کا مظاہرہ کریں گے ،پورے پاکستان کے قریہ قریہ میں ہمارے ساتھ محبت کرنے والے احباب موجود ہیں ، جو صحابہ اکرام کی ناموس پر پہرہ دے رہے ہیں،انہوں نے مزید کہا کہ ہمیں اسلام کا ٹھیکیدار کہا جاتا ہے ہم اسلام کے ٹھیکیدار نہیں بلکہ چوکیدار ہیں ، چوکیدار کا کام ہوتا ہے کہ وہ ڈاکو ؤں و چوروں کو چوری کرنے سے روکے ،اگر وہ بعض نہ آئیں تو انکے ساتھ مزاحمت کریں اورموت کو گلے لگا لیں۔