گلیانہ- گورنمنٹ پرائمری سکول سہنہ کی گری ہوئی دیوار بچوں کے لئے سیکورٹی رسک بن گئی ۔

41

گلیانہ(ڈاکٹر انصر فاروق)گورنمنٹ پرائمری سکول سہنہ کی گری ہوئی دیوار بچوں کے لئے سیکورٹی رسک بن گئی ۔ محکمہ بلڈنگ اور ایجوکیشن کے بڑوں نے آنکھیں بندکر لیں۔ تفصیلات کے مطابق برساتی پانی کے دیواروں کے ساتھ کھڑا ہونے کہ وجہ سے موسم گرما کی چھٹیوں سے پہلے سکول کی دیوار گر گئی ۔ میڈیا کے ذریعے اس کی نشاندہی بھی کی گئی۔ محکمہ کے ذمہ داران نے اس کا وزٹ بھی کیا ۔ مگر وزٹ صرف وزٹ ہی رہا ۔ آج تقریباً اس دیوار کو گرے ہوئے 3 ماہ ہونے کو ہیں ۔ مگر محکمانہ سستی اور غفلت کی انتہا یہ ہے کہ ابھی تک یہ چند فٹ گری ہوئی دیوار تعمیر نہیں کی جاسکی ۔ جو بچے حصول علم کے لئے اس سکول میں آتے ہیں۔ ان کی زندگیاں سیکورٹی رسک بن ہوئی ہیں۔ اور ان کے سکول پراپرٹی کو بھی حفاظتی دیوار کے نہ ہونے کہ وجہ سے خطرہ ہے۔ کیا محکمہ ایجوکشن کے ذمہ دارن کو اس بات کا احساس نہیں ہے ۔ یا کہ وہ کسی انجانے حادثے کے منتظر ہیں ۔ کہ جب کوئی خدانخوستہ حادثہ ہو جائے گا۔ اور کسی کی جان چلی جائے گی۔ اس وقت دفاتر میں چین کی نیند سونے والے جاگیں گے۔ ڈی سی گجرات۔ ای ڈی او ایجوکیشن اور دیگر ذمہ داران اس بات کا نوٹس کب لیں گے۔ اور کب ان بچوں کی زندگیوں کو محفوظ کر نے کے اس بات کا نوٹس لیا جائے گا۔ اور اس دیوار کو تعمیر کروا کے بچوں اور سکول پراپرٹی کو لاحق خطرہ سے بچایا جائے گا۔ کیا بڑھو پنجاب ۔ بڑھو پنجاب کے نعرہ میں یہ شامل نہیں ہے کہ ان ننھے پھولوں کی زندگیا ں بھی قیمتی ہیں۔ کیا ذمہ داران محکمہ کسی اور APS سانحہ کے ہونے کے منتظر ہیں۔ اس کے ہونے کے بعد اس کی تعمیر شروع کریں گے۔ اور اس کے لئے فنڈز جاری کریں گے۔ یا وقت سے پہلے ہی کچھ کر گزریں گے۔