تیسرا ٹی ٹونٹی: 181 رنز کا ہدف، سری لنکا کی تیسری وکٹ گرگئی

8

پاکستان نے پہلے کھیلتے ہوئے مقررہ 20 اوورز میں صرف تین وکٹوں کے نقصان پر 180 رنز بنائے۔ شعیب ملک نے جارحانہ بلے باز کرتے ہوئے نصف سنچری سکور کی۔

لاہور: (فلک نیوز) قذافی سٹیڈیم لاہور میں کھیلے جا رہے تیسرے اور فائنل ٹی ٹونٹی میچ میں پاکستان نے پہلے کھیلتے ہوئے سری لنکا کو جیت کیلئے 181 رنز کا ہدف دیا ہے۔ تاہم اننگز کے آغاز میں ہی سری لنکا کو نقصان اٹھانا پڑ گیا جب دلشان مناویرا بولڈ ہو کر چلتے بنے۔ انہوں نے صرف ایک رن ہی بنایا۔ اس کے بعد سکور 15 تک ہی پہنچا تھا کہ سماراوکرما ایک غیر ضروری شارٹ مارتے ہوئے کیچ آؤٹ ہو گئے۔ سماراوکرما نے صرف 4 رنز بنائے۔ اس سے قبل سری لنکا کے کپتان تھیسارا پریرا نے ٹاس جیت کر فیلڈنگ کا فیصلہ کیا۔ پاکستانی اوپنرز فخر زمان اور عمر امین میدان میں اترے اور پراعتماد طریقے سے بیٹںگ کرتے ہوئے ٹیم کے سکور کو آگے بڑھایا۔ تاہم پاکستان کا 57 رنز پر پہنچا تو جارحانہ بیٹنگ کر رہے کھلاڑی فخر زمان بولڈ ہو کر واپس لوٹ گئے۔ فخر زمان نے تین چوکوں کی مدد سے 31 رنز بنائے۔ اس کے بعد عمر امین نے بابر اعظم کے ساتھ مل کر سکور کو آگے بڑھایا اور اپنے رنز میں بھی اضافہ کیا۔ ان کی جارحانہ بلے بازی سے گراؤنڈ میں موجود تماشائی بہت محظوظ ہوئے۔ پاکستان کی دوسری وکٹ 91 پر گری جب عمر امین ایک اونچی شارٹ کھیلنے کی کوشش میں باؤنڈری کے قریب کیچ آؤٹ ہو گئے۔ عمر امین نے شاندار بلے بازی کا مظاہرہ کرتے ہوئے 3 چوکوں اور ایک چھکے کی مدد سے 45 رنز بنائے۔ پاکستانی ٹیم نے تیرہ اعشاریہ ایک اوور میں سنچری مکمل کی۔ اس کے بعد شعیب ملک میدان میں اترے اور بابر اعظم کے ساتھ مل کر ذمہ داری کے ساتھ بیٹنگ کی۔ پاکستانی ٹیم نے اٹھارہ اعشاریہ تین اوورز میں اپنے 150 رنز مکمل کیے۔ اننگز کے آخری اوور میں شعیب ملک ہی چھائے رہے۔ انہوں نے جارحانہ بلے باز کا مظاہرہ کرتے ہوئے 2 چھکوں اور 5 چوکوں کی مدد سے 51 رنز بنائے اور آخری اوور میں آؤٹ ہو کر واپس لوٹے۔ اس کے بعد آنے والے بلے باز فہیم اشرف نے لگاتار دو چھکے مار کر میچ کو انتہائی دلچسپ بنا دیا۔ یوں پاکستان نے مقررہ 20 اوورز میں تین وکٹوں کے نقصان پر 180 رنز بنائے۔ پاکستان نے اس میچ میں دو تبدیلیاں کرتے ہوئے احمد شہزاد کی جگہ عمر امین جبکہ عثمان خان کی جگہ محمد عامر کو ٹیم میں جگہ دی ہے۔ یہ پہلا موقع ہے جب محمد عامر پاکستان میں کسی بھی نوعیت کا بین الاقوامی میچ کھیلیں گے۔ دوسری جانب سری لنکن ٹیم میں اشان پریانجان کی جگہ چتارونگا ڈی سلوا کو شامل کیا گیا ہے۔ ٹی ٹونٹی سیریز کے پہلے میچ میں پاکستان نے 7 وکٹوں سے کامیابی حاصل کی تھی جبکہ دوسرے میچ میں شاداب خان کی بیٹنگ کی بدولت پاکستان نے جیت حاصل کی تھی۔ خیال رہے کہ سری لنکن ٹیم 8 سال بعد پاکستان کے دورے پر آئی ہے۔