گلیانہ- نماز قائم کرنے سے ہی ہمارے تمام مسائل حل ہو جائیں گے۔ علامہ غلام بشیرنقشبندی

7

گلیانہ( ڈاکٹر انصرفاروق)نماز قائم کرنے سے ہی ہمارے تمام مسائل حل ہو جائیں گے۔ اگر دنیا کا وزیر اعظم کسی کو بلائے تو وہ بڑے شوق سے بن سنوار کے اس کے پاس ملاقات کے لئے جاتا ہے ۔ اور اس بات پر نازاں ہو تا ہے کہ اس کو ملک کے وزیر اعظم نے بلا یا تھا۔ مگر اللہ کی طرف سے جب بلاوا آتا ہے تو کتنے لوگ اس کی طرف جاتے ہیں ۔ دل کو شیشے کو صاف کرنے کے لئے پانچ وقت کی نماز ضروری ہے۔ علامہ غلام بشیر نقشبندی نے جامع مسجد فیضان مدینہ ڈھل گہیڑ میں درس قرآن و حدیث دیتے ہو ان خیالات کا اطہار کیا۔ انھوں نے کہا پہلے زمانے میں جب بادشاہ درابار میں آتا تھا تو دربان ایک صدا لگاتے تھے کی با ادب ۔ ہوشیار باداشاہ سلامت تشریف لا رہے ہیں۔ آج بھی نماز سے پہلے جب اقامت کہی جاتی ہے تو نماز جو کی بکھر کے بیٹھے ہوتے ہیں ۔ وہ ایک صف میں آکر کھڑے ہو جاتے ہیں۔ ان کہا جاتا کہ آجاؤ خالق حقیقی سے ملاقات کا وقت ہو گیا ہے۔ جیسے منادی ہوتی کہ ہوشیار ہو جائے بادشاہ سلامت آرہا ہے۔ تو اقامت کہنے کہ رہا ہوتا کہ خبردار ہو جاؤ مالک کائنات سے ملاقات کا وقت ہو گیا ہے۔ نماز وہ عبادت ہے جو انسان کو دنیا مین رکھتے ہوئے ۔ اس کی حاضری دربار خدا وندی مین لگوا دیتی ہے۔انھوں نے کہا آج ہمارے تمام مسائل حل نماز کی ادائیگی کے ساتھ وابستہ ہے۔ اور ہمیں چائیے کہ جب اذان ہو تو ہم سارے کام چھوڑے کر مسجد کی طرف جائیں ۔اور یہ خیال رکھیں کہ مالک نے بلایا ہے ۔ انھوں نے کہا میرے آج کے اس درس کا پیغام یہ کہ جب اذان ہو تو یہ خیال کر کے مسجد کی طرف جائیں کے مالک نے بلایا ہے