افغان دہشتگردوں کا پاکستانی چیک پوسٹ پر حملہ، کیپٹن اور ایک سپاہی شہید

4

دہشتگردوں نے باجوڑ ایجنسی میں سرحدی چیک پوسٹ کو حملے کا نشانہ بنایا۔ پاک فوج کی جوابی فائرنگ میں 10 دہشتگرد ہلاک، متعدد زخمی فرار

باجوڑ ایجنسی: (فلک نیوز) افغانستان کی سرزمین سے ایک مرتبہ پھر پاکستانی چیک پوسٹ کو حملے کا نشانہ بنایا گیا ہے۔ دہشتگردوں کے اس حملے میں پاک فوج کے کیپٹن جنید حفیظ اور سپاہی رحمان شہید ہو گئے جبکہ 4 جوان زخمی بھی ہوئے۔ پاک فوج نے بھرپور جوابی کارروائی کرتے ہوئے 10 دہشتگردوں کو ہلاک جبکہ متعدد کو زخمی کر دیا۔ پاک فوج کی فائرنگ کے بعد کئی دہشت گرد زخمی حالت میں فرار ہو گئے۔   اس سے قبل رواں ماہ 9 نومبر کو بھی افغان سرزمین سے دہشتگردوں نے پاکستانی چیک پوسٹ پر حملہ کیا تھا۔ راجگال وادی میں حملے کے نتیجے میں سپاہی محمد الیاس شہید ہو گئے تھے جبکہ پاک فوج نے بھرپور کارروائی کرتے ہوئے 5 دہشتگردوں کو مار گرایا تھا۔ پاک فوج کے ترجمان نے اس حملے کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہا تھا کہ دہشتگرد حملوں کی وجہ افغانستان کے کئی علاقوں میں حکومت کا کنٹرول نہ ہونا ہے۔ دہشتگردوں نے حملہ افغانستان کی حدود سے کیا۔ یاد رہے کہ پاک افغان بارڈر کو محفوظ بنانے کیلئے پاکستان کی جانب سے باڑ لگانے اور چیک پوسٹیں بنانے کا کام تیزی سے جاری ہے۔ 2344 کلومیٹر طویل باڑ لگائی جائے گی جبکہ 750 قلعے تعمیر کئے جائیں گے جن میں سے 95 قلعے مکمل ہو چکے ہیں اور 82 زیرِ تعمیر ہیں۔ 2344 کلومیٹر طویل سرحد میں سے 43 کلومیٹر پر باڑ لگانے کا کام مکمل ہو چکا ہے۔