نماز , روزہ , وضو , مسواک کے کیا فوائدہیں؟

32

دین اسلام ابتدا سے ہی ہدایت کا سرچشمہ رہا ہے اور ایک مکمل ضابطہ حیات ہے۔آج اکیسویں صدی کے تیز ترین دور میں سائنس اسلامی طریقہ کارمیں انسانیت کی بہتری کو تسلیم کرنے پر مجبور ہے۔سائنس اس بات کی تصدیق کرتی ہے کہ دین اسلام میں عبادات کی ادائیگی کیلئے جو طریقہ کار بیان کیا گیا ہے وہ انسانی صحت پر حیرت انگیز مثبت نتائج مرتب کرتا ہے۔آج ہم اپنے قارئین کو ان عبادات اور طریقہ کار کے حوالے سے معلومات فراہم کریںگے ۔ ۱:نماز نماز دین اسلام کا ستون ہے اور جنت کی کنجی ہے ۔قرآن مجیدمیں ارشاد ہے ’’نماز قائم کرو اور روزے رکھو‘‘۔ حدیث نبوی ؐمیں بھی نماز کی ادائیگی کے بارے میںمتعدد مرتبہ بیان کیا گیا ہے ۔نماز کی ادائیگی کے دوران حاصل ہونیوالے فوائد درجہ ذیل ہیں۔ ٭تکبیر:نماز میں تکبیر کے دوران جب ہم اپنے ہاتھوں اور کندھوں کو حرکت میں لاتے ہیںتواعضاء کی اس حرکت سے انسانی جسم کے اوپر والے حصے میں خون کی روانی تیز ہو جاتی ہے جو کہ صحت کے اصولوں کے مطابق احسن عمل ہے۔ ٭سجود:دوران سجدہ جب نمازی اپنا ماتھا زمین کے ساتھ جوڑتے ہیں تو یہ کیفیت دماغ کو تازہ خون کی سپلائی تیز کرتی ہے ۔دوران سجدہ آپ کو جسم کے مختلف دردوں سے نجات ملنے کے قوی امکان ہوتے ہیں۔ماہرین کے مطابق نماز میںدوران سجدہ نمازی کی کمر کے نچلے حصے کو 24فیصد،ٹخنے کو 27 فیصد،پاؤں کے پنجوں کو 13فیصد،گھٹنوں کو 53فیصداور کلائیوں کو28فیصد تک درد سے راحت نصیب ہوتی ہے۔ ٭ تشہُد:نماز میں تشہُدکی حالت میں بیٹھنے سے ہمارے کولہے،کہنی، دونوںگھٹنے،کمر اور ہاتھوں کی کلائیاں اس طریقے سے حرکت کرتی ہیںکہ ہمارے پورے جسم کو سکون مہیا کرتی ہے۔ ایسی حالت میں بیٹھنے سے جسم کے مختلف حصوں میں پریشربنتا ہے جو کہ ایک قسم کا مساج کا کام کرتا ہے جو تنائو کو کم کر تا ہے۔علاوہ ازیں اس حالت میں قیام نظام انہظام کو بھی تیز کرتا ہے۔ ۲:روزہ روزہ بھی دین اسلام کا ایک اہم رکن ہے ۔ دینوی لحاظ سے جہاں روزے کی اتنی اہمیت ہے تودوسری جانب دنیاوی لحاظ سے بھی روزے کی اہمیت سے انکار نہیں کیا جا سکتا۔دین اسلام کے علاوہ دنیا کے مختلف ادیان میں بھی روزہ کا تصور پایا جاتا ہے جیسے ہندو مذہب میں ورت رکھنے کا رواج ہے ۔روزہ صرف بھوکا پیاسا رہنے کا ہی نام نہیں ہے بلکہ اس کے متعدد فوائد درجہ ذیل ہیں ٭چربی میں کمی:روزہ کی ادائیگی مسلمانوں پر فرض ہے۔ روزہ جہاں ایک انتہائی اہم اسلامی عبادت ہے وہاں ہی انسان کی بہترین صحت کا ضامن بھی ہے۔متحدہ عرب امارات کے ماہرین قلب کی ٹیم نے ریسرچ سے ثابت کیا ہے کہ روزہ رکھنے والے افراد میں چربی کی مقدار میں کمی واقع ہوتی ہے۔ڈائٹنگ کرنے والے حضرات کیلئے ماہ رمضان عبادت کے ساتھ وزن کم کرنے کیلئے بھی مبارک مہینہ ہے۔ ٭ نظام انہضام میں بہتری :رمضان میں کچھ کھائے پیئے بغیر دن گزارنا عبادت و ثواب کے ساتھ انسانی معدہ اور نظام انہضام کو بہتر بناتا ہے۔اس عمل میں معدہ کو خوراک ہضم کرنے میں بہت وقت درکار ہوتا ہے اور اس کے ساتھ نماز کی باقاعدہ ادائیگی انسان کے جسم کو تندرست وتوانا رکھتی ہے اور کھانا ہضم کرنے میں معاون ثابت ہوتی ہے۔ ٭ غذا بہتر طریقے سے جسم میں ہضم کرنا: جب آپ پورا مہینہ کچھ کھائے اور پیئے بغیر گزارتے ہیں تو آ پ کا میٹا بولیزم پہلے سے بہتر طریقے سے کام کرنا شروع کر دیتاہے اور آپ کے جسم میں خوراک کو ہضم کرنے کی صلاحیت میں بہتری آتی ہے۔یہ بہتری تمام دن روزہ کی حالت میں رہنے اور رات گئے کھانا کھانے(سحری)سے پیدا ہو تی ہے جو کہ آپ کے معدے کے پٹھوں کو زیادہ غذا کو جذب کرنے کیلئے طاقت بخشتاہے۔ ۳:وضو وضو بذات خودہمیشہ سے ہی اسلامی عبادات و رسومات میں شفاعت کا ذریعہ رہا ہے لیکن متعدد حالات میں وضو کو لازم قرار دیا گیا ہے۔جیسے کہ دن میں پنجگانہ نماز سے پہلے وضو کو لاز م قرار دیا گیا ہے۔پاکیزگی حاصل کرنے کے علاوہ وضو جسمانی کھچائو اور بے سکونی کو بھی کم کرتا ہے اور نظام دوران خون پر بھی مثبت اثرات مرتب کر تا ہے۔ ۴:مسواک مسواک سنت نبویؐ ہے اور ایک سنت کو زندہ رکھنا اجر عظیم ہے۔مسواک مسوڑوں کو مضبوط رکھتی ہے اور دانتوں کو ریخت سے بچاتی ہے ۔مسواک کرنے والے افراد کو دانتوں کے درد سے بھی نجات ملتی ہے اور دانتوں میں موجود جوف (cavity)کو بھی ختم کرنے میں مددگار ثابت ہوتی ہے۔علاوہ ازیں مسواک کے استعمال سے منہ سے بو آنا بھی بند ہو جاتا ہے۔