ڈاکٹر طاہرالقادری کی حکومت کو مستعفی ہونے کیلئے 31 دسمبر کی مہلت

19

سربراہ پاکستان عوامی تحریک طاہر القادری نے حکومت کو مستعفی ہونے کیلئے 31 دسمبر تک کی مہلت دے دی۔

لاہور میں کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے سربراہ پاکستان عوامی تحریک طاہر القادری نے کہا کہ نواز شریف ،شہباز شریف، رانا ثناءاللہ اور مسلم لیگ (ن) کی پوری حکومت 31 دسمبر تک مستعفی ہوکر خود کو قانون کے سپرد کردے، ورنہ 31 دسمبر کو آئندہ لائحہ عمل کا اعلان کروں گا۔

طاہر القادری نے کہا کہ یہ لوگ اپنی مرضی کے بنچ بناتے ہیں لیکن ہم آپ کی مرضی کے بنچ کے پاس کیس لے کر نہیں جائیں گے، بلکہ ہم وہ بنچ چاہتے ہیں جو قانون کی سنے اور انصاف فراہم کرے، چند دنوں کی بات ہے شہباز شریف اور نواز شریف گھسیٹے جائیں گے، یہ لوگ آدھے پاگل تو ہوگئے ہیں ، اس کے بعد پورے پاگل ہوجائیں گے اور دیوار پر ٹکریں ماریں گے۔

سربراہ عوامی تحریک نے کہا کہ 14 بے گناہوں کی لاشیں گرا کرسمجھا گیا کہ کوئی انصاف نہیں ہوگا، سانحہ ماڈل ٹاؤن کے انصاف میں غیر ضروری تاخیر برداشت نہیں کریں گے، شہبازشریف  جواب دیں کہ آپ ذمے داری سے کس طرح فارغ ہوسکتے ہیں، کیا رانا ثناء اللہ آپ کے وزیر قانون نہیں؟، شریف خاندان نے اپنے خلاف فیصلہ آنے پر عدلیہ پر الزام تراشی کی اور کیچڑ اچھالا، ریاست کی ذمے داری ہے کہ وہ ریاستی اداروں کی حفاظت کرے۔