پیٹھ میں چھرا گھونپنے والوں کا اب ساتھ نہیں دیں گے، آصف زرداری

13

گڑھی خدا بخش: (فلک نیوز) سابق صدر آصف علی زرداری نے کہا ہے کہ ملک میں دوہرا معیار نہیں چلے گا، پیٹھ میں چھرا گھونپنے والوں کا اس مرتبہ ساتھ نہیں دیں گے۔

پاکستان پیپلز پارٹی کے شریک چیئرمین آصف علی زرداری کا بینظیر بھٹو کی برسی کے موقع پر خطاب میں کہنا تھا کہ بی بی شہید نے آمرانہ قوتوں کا ڈٹ کر مقابلہ کیا۔ بینظیر بھٹو ایک مثالی لیڈر تھیں، ان کی طرح کوئی اور بہادر شخص نہیں دیکھا۔ بی بی کی شہادت کو 10 سال کا عرصہ بیت گیا لیکن لگتا ہے کہ وہ کل ہم سے جدا ہوئیں۔ میں اور بلاول بھٹو شہید کا مشن آگے بڑھا رہے ہیں۔ بلاول صرف میرا ہی نہیں پوری قوم کا بیٹا ہے جبکہ میرے کارکنوں کی بیٹیاں بھی میری بیٹی آصفہ جیسی ہیں۔

آصف علی زرداری نے کہا کہ مجھ جیسے بہت سارے لیڈر آئیں اور جائیں گے لیکن نام صرف بھٹو کا رہے گا۔ میں نے ہمیشہ سیاست سے کام لیا ہے۔ ہم نے پاکستان پیپلز پارٹی کو بچا کر چلانا ہے، کسی جنگ میں نہیں ڈالنا۔

سابق صدر نے اپنے خطاب میں اپنے سیاسی مخالفین کو بھی آڑے ہاتھوں لیتے ہوئے کہا کہ میں اپنے مخالفین کو کہتا ہوں کہ اتنا کرو جتنا برداشت کر سکیں۔ آپ میں برداشت کرنے کی ہمت نہیں ہے۔ میں جانتا ہوں جب آپ جیلوں میں جا کر روتے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ آر اوز کے بنائے ہوئے لیڈرز سازشی عناصر کے گندے انڈے ہیں۔ سازشی انڈوں میں سے بچے نکل رہے ہیں۔ کسی نے این آر او دینے کی کوشش کی تو مقابلہ کریں گے۔ ملک میں اب دوہرا معیار نہیں چلے گا۔ آپ نے ہماری پیٹھ میں چھرا گھونپا، اس دفعہ ساتھ نہیں دیں گے۔

بینظیر بھٹو کی دسویں برسی سے خطاب کرتے ہوئے پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کا کہنا تھا کہ بی بی شہید روشنی اور زندگی کی علامت تھیں۔ ہم آج کے دن کو بی بی کی برسی نہیں کہتے کیونکہ برسی مناتے ہوئے آنکھیں بے چین ہو جاتی ہیں۔ ہم آج کے دن کو یوم شہادت کہتے ہیں۔

چیئرمین پیپلز پارٹی نے کہا کہ ہم بینظیر بھٹو کے وعدوں کو نہیں بھولے اور ان کے بتائے ہوئے راستے پر ہی چل رہے ہیں۔ عوام کی خوشحالی کیلئے ظالموں سے لڑ رہے ہیں۔ بلاول بھٹو کا کہنا تھا کہ بینظیر بھٹو کو جمہوریت کا علم بلند کرنے، آمریت سے لڑنے اور پسے ہوئے طبقے کی آواز بلند کرنے پر سزا دی گئی۔ اس لیے آج پوری دنیا ان کو یاد کر رہی ہے۔