کروڑوں ووٹ لینے والے کو پانچ افراد نے فارغ کر دیا، نواز شریف

12

گجرات: (فلک نیوز) سابق وزیرِ اعظم نے کہا ہے کہ میرے دستخطوں سے لگے تمام منصوبے ختم کر دو، چھین سکتے ہو تو نام بھی چھین لو لیکن قوم نے بیدار ہو کر فیصلہ کن جنگ لڑنے کا ارادہ کر لیا۔

سابق وزیرِ اعظم میاں محمد نواز شریف کا گجرات میں جلسے سے خطاب میں کہنا تھا کہ آپ کو فخر ہونا چاہیے کہ مجھ پر کرپشن کا کوئی الزام نہیں، صرف بیٹے سے تنخواہ نہ لینے پر نااہل قرار دیدیا گیا اور کروڑوں ووٹ لینے والے کو صرف پانچ بندوں نے فارغ کر دیا۔ کیا عوام کو کروڑوں ووٹ لینے والے کی باعزتی منظور ہے؟ کیا یہ سکھا شاہی منظور ہے؟ انہوں نے کہا کہ ستر سالوں سے کچھ نہیں بدلا، یہ فیصلے بہت پہلے بھی آئے تھے بلکہ میرے خلاف ایک اور کیس لگنے والا ہے، ابھی ان کا دل نہیں بھرا۔

ان کا کہنا تھا کہ ستر سال سے لگی بیماری کو ختم کرنے کا لمحہ آ گیا ہے، میرا پیغام ہر پاکستانی کے دل میں اتر گیا ہے۔ مجھے یقین ہو گیا ہے کہ قوم بیدار ہو چکی ہے، پاکستان جاگ چکا ہے۔

سابق وزیرِ اعظم نے کہا کہ ہمارے امیدواروں کو سینیٹ الیکشن میں حصہ لینے سے یہ کہہ کر روک دیا گیا کہ آپ اس لیے انتخابات میں حصہ نہیں لے سکتے کیونکہ اس پر نواز شریف کے دستخط موجود ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کے ایٹمی پروگرام، موٹرویز، ہوائی اڈوں، بجلی گھروں اور دیگر تعمیراتی منصوبوں پر بھی میرے دستخط موجود ہیں، انھیں بھی ختم کر دو۔ نواز شریف نے کہا کہ سینیٹ کی ٹکٹوں پر میرے دستخطوں کے اعتراض کے باوجود پارلیمنٹ نے اس فیصلے کو مسترد کر کے تمام امیدواروں کو کامیاب کر دیا۔