چیرمین سینیٹ کیلئے انوارالحق کاکڑ اور صادق سنجرانی کے نام زیر غور ہیں، بزنجو

21

اسلام آباد: (فلک نیوز) وزیر اعلیٰ بلوچستان نے کہا ہے کہ عمران خان نے ہاتھ مضبوط کر دیئے، بلوچستان سے چیئرمین سینیٹ لانے کی پوزیشن میں آ گئے، ہمارے ساتھ چھ سینیٹرز ہیں، چیئرمین سینیٹ بھی انہی میں سے ہو گا۔ عمران خان کا چیئرمین سینیٹ کے لیے بلوچستان کے امیدوار کی مکمل حمایت کا اعلان

وزیر اعلیٰ بلوچستان اور عمران خان نے مشترکہ پریس کانفرنس کی، اس موقع پر وزیر اعلیٰ بلوچستان عبدالقدوس بزنجو کا کہنا تھا کہ اب ہم اپنا چیئرمین سینیٹ لانے کی پوزیشن میں آ گئے ہیں، عمران کے پاس جرگہ لیکر آئےاور کامیاب ہو گئے، عمران خان کو دو نام بتا دیئے ہیں ، ایک انوارالحق کا دوسرا صادق سنجرانی کا۔

وزیر اعلیٰ بلوچستان نے کہا کہ پہلا کریڈٹ عمران خان کو جاتا ہے پہلی دفعہ بلوچستان کو چیئرمین سینیٹ لانے کا موقع مل رہا ہے، امید کرتا ہوں دوسری جماعتیں بھی سپورٹ کریں گی، ایم کیوایم، نیشنل پارٹی، سردار اختر مینگل، جماعت اسلامی، مولانا فضل الرحمان سے بھی بات کریں گے۔ انکا یہ بھی کہنا تھا کہ عمران خان سے ایک اور درخواست کریں گے،کہ جو پینل دیں گے انہیں بھی سپورٹ کریں، بلوچستان کا چیئرمین سینیٹ ہو گا تو مسائل حل کرنے میں آسانی ہوگی، پیپلز پارٹی بھی چاہتی ہے بلوچستان سے پسماندگی کو دورکیا جائے۔

مشترکہ پریس کانفرنس میں عمران خان نے چیف منسٹر بلوچستان کو ایڈوانس مبارکباد دیتے ہوئے کہا کہ کسی صورت نہیں چاہتے چیئرمین سینیٹ ن لیگ کا بنے، پہلی بار بلوچستان سے چیئرمین سینیٹ بنے گا، وزیراعلیٰ بلوچستان کے پینل کو سپورٹ کرینگے۔ انہوں نے وزیر اعلیٰ بلوچستان کی غیر مشروط حمایت کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ ابھی پہلا قدم ہے،مزید آگے بڑھیں گے، فیڈریشن مضبوط کرنے کے لیے آج بہترین قدم اٹھایا گیا۔

عمران خان کا مزید کہنا تھا کہ مجھے خوشی ہے بلوچستان سے پہلی دفعہ چیئرمین سینیٹ منتخب ہوگا، مسلم لیگ(ن)کی ساری اسٹرگل نوازشریف کو بچانا ہے، بلوچستان نے بہت برا وقت دیکھا ہے، فاٹا کے لوگوں کا بھی جنگ کے دوران بڑا نقصان ہوا، ہماری کوشش تھی فاٹا سے ڈپٹی چیئرمین سینیٹ بنے۔