گجرات- نوٹیفکیشن دے دیا گیا ہے اب کوئی رکاوٹ نہیں مؤذن سپیکر پر چاروں اطراف اذان دینا شروع کردیں. علامہ خادم حسین رضوی

26

رب ذوالجلال نے رسول پاک کو معراج کے موقع پر امام الانبیاء اور قاب قوسین او ادنیٰ کے منصب پر فائز فرمایا۔
ختم نبوت شقوں کے حوالہ سے راجہ ظفر الحق رپورٹ مل چکی ہے اس سلسلہ میں جلد اہم اعلانات کرینگے۔
نوٹیفکیشن دے دیا گیا ہے اب کوئی رکاوٹ نہیں مؤذن سپیکر پر چاروں اطراف اذان دینا شروع کردیں۔
علامہ خادم حسین رضوی ،پیر محمد افضل قادری کا نیک آباد شریف میں سالانہ معراج النبی کانفرنس اور خواجہ پیر محمد نیک عالم کے عرس مبارک کے موقع پر ہزاروں شرکا سے خطاب۔ صدارت پیر مفتی محمد اشرف القادری نے کی۔
مبلغ برطانیہ پیر مسعود قادری نے مشائخ نیک آباد کی خدمات کا تذکرہ کیا جبکہ علامہ غلام غوث بغدادی مہمان خصوصی تھے۔
گجرات ؍ اسلام آباد ؍ لاہور : (پریس ریلیز 14اپریل 2018) رب ذوالجلال نے رسول پاکﷺ کو معراج کے موقع پر ’’امام الانبیاء‘‘ اور ’’قاب قوسین او ادنیٰ‘‘ کے منصب پر فائز فرمایا اور لاتعداد علوم سے نوازاکر اعلیٰ ترین مقام ومرتبہ عطا فرمایا۔ ختم نبوت شقوں کے حوالہ سے راجہ ظفر الحق رپورٹ مل گئی ہے اس سلسلہ میں جلد اہم اعلانات کرینگے۔ نوٹیفکیشن دے دیا گیا ہے اب کوئی رکاوٹ نہیں مؤذن سپیکر پر چار اطراف اذان دینا شروع کردیں۔ ان خیالات کا اظہار علامہ خادم حسین رضوی اور پیر محمد افضل قادری نے نیک آباد شریف میں سالانہ معراج النبی کانفرنس اور ولی کامل خواجہ پیر محمد نیک عالم قادری کے عرس مبارک کے موقع پر ہزاروں شرکا سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ تقریبات کی صدارت پیر مفتی محمد اشرف القادری نے کی۔ جبکہ پیر محمد مسعود قادری، علامہ نصر اللہ خان قادری، سید زین العابدین شاہ، مفتی عبد الغفور گولڑوی ودیگر نے خطاب کیا۔ اس موقع پر علامہ غلام غوث بغدادی مہمان خصوصی تھے۔ مقررین نے کہا کہ معراج النبیﷺ کے موقع پر خالق کائنات نے اپنی عظیم تخلیق حضرت محمد مصطفیﷺ کو اپنی زیارت عطا فرمائی، اور ارضیات اور فلکیات کی نعمتوں اور جنت ودوزخ کا مشاہدہ کرایا۔ اس عظیم سفر میں انبیاء سابقین، فرشتوں اور حوروں نے رسول اللہﷺ کے استقبال کئے اور اللہ رب العالمین نے نماز اوردیگر تحائف عطا فرمائے۔ اسی سفر میں رسول اللہﷺ نے انبیاء رسل اورر ملائکہ کی امامت کراکے تاریخ میں نئے باب کا اضافہ فرمایا۔ علماء کرام نے کہا کہ معراج ایک ایسا عظیم معجزہ ہے جس نے قیامت تک آنے والوں کو عاجز کردیا ہے۔ اس موقع کہا گیا کہ وطن عزیز سے مہنگائی، بے روزگاری، غربت، جہالت، کرپشن ، اغیار کی غلامی اور تباہ کن فحاشی ختم کرنے کی اشد ضرورت ہے۔ مقررین نے اس بات پر زور دیا کہ مسلمان تزکیہ نفس، اصلاح معاشرہ، اعلیٰ اخلاق اور خدمت خلق کی اصولوں پر عمل پیرا ہوں اور نظریہ پاکستان پر عمل کرتے ہوئے ملک میں نظام مصطفیﷺ اور نظام خلافت راشدہ کے نفاذ کیلئے میدان عمل میں آجائیں۔ اس موقع پر صاحب عرس کی کرامات اور خدمات کا تذکرہ کیا گیا اور انہیں زبردست خراج تحسین پیش کیا گیا۔ اس سال نیک آباد شریف سے درس نظامی، حفظ قرآن مجید ودیگر شعبوں سے 1200 (بارہ سو ) کے قریب طلبا وطالبات فارغ التحصل ہو رہے ہیں۔