چکنی جلد کا حل

29

چکنی جلد سے نجات پانے کے لیے بہت سے ٹوٹکے آزمائے جاتے ہیں جن میں سے چند مندرجہ ذیل ہیں۔ لیموں سے مساج: چہرے پر آپ بالائی نہ لگائیں، نہ ہی کوئی کریم لگائیں۔ لیموں دو حصوں میں کاٹ لیں۔ ایک حصہ چہرے پر آہستہ سے ملیں۔ دوسرے نصف کا عرق نکال کر آدھے گلاس پانی میں ملا کر پی لیں۔ اس سے آپ کا رنگ بھی صاف ہو جائے گا اور جلد کی چکنائی بھی کم ہو جائے گی۔ یہ عمل روزانہ چھ سے آٹھ ہفتوں تک کریں۔ انڈے کی سفیدی: ایک انڈے کی سفیدی میں ایک چمچ دودھ ملا کر اچھی طرح پھینٹ لیں۔ اسے چہرے پر لگائیں۔ دس پندرہ منٹ کے بعد چہرے کو پانی سے اچھی طرح دھو ڈالیں۔ انڈے کی سفیدی میں پائے جانے والے عناصر جلد کی چکنائی کو اچھی طرح صاف کر دیتے ہیں۔ یہ ملغوبہ ریشوں کو دوبارہ بنانے میں بھی کافی مفید ہوتا ہے۔ انڈا جلد کی صحیح ورزش کرتا ہے۔ انڈے کی زردی خشک جلد کے لیے بھی مفید ہے۔ تلسی کے پتے: تلسی کے تازہ پتوں کا پیسٹ دو چمچ، عرق گلاب ایک چمچ، ان کو ملا کر چہرے پر لگائیں۔ دس پندرہ منٹ کے بعد چہرے کو ٹھنڈے پانی سے دھو ڈالیں۔ تلسی کا یہ پیسٹ اچھی قسم کا بلیچ ہے۔ یہ جلد کی گہرائی تک جا کر صفائی کرتا ہے۔ یہ پیسٹ مردہ خلیوں کو اچھی طرح سے صاف کرتا ہے اور چکنے غدودوں کی سرگرمی کے اثرات کو کم کرتا ہے۔ عرق گلاب سکن ٹانک ہے۔ اس پیسٹ کو روزانہ استعمال کرنے سے جلد کی چکنائی کم ہو جاتی ہے۔ آئل فری صابن: آپ کی جلد چکنی ہے تو چکنی اشیا سے پرہیز کریں۔ آئل فری فیس واش استعمال کریں اور ہفتے میں ایک بار ملتانی مٹی کا ماسک لگائیں اور 20 منٹ بعد چہرہ دھولیں۔ گرمیوں میں روغن کدو اور زیتون لگانا مناسب نہیں ہے۔ چکنی جلد والوں کے شائن کی ضرورت نہیں ہوتی کیونکہ چکنی جلد قدرتی طور پر بہت چمک دار ہوتی ہے۔ شہد کا پیسٹ: ایک چمچ شہد، آدھا چمچ لیموں کا رس ملا کر چہرے پر لگائیں۔ پندرہ بیس منٹ کے بعد چہرے کو صاف پانی سے دھو لیں۔ شہد اور لیموں کے عناصر جلد کی چکنائی کو اچھی طرح سے نکال دیتے ہیں۔ اس میں پائے جانے والے عناصر چکنائی پیدا کرنے والے غدود وں کی سرگرمی کو بڑھنے سے روکتے ہیں۔ پوپ کارن: دو مٹھی پوپ کارن (بھنی ہوئی مکئی) آدھا کپ دودھ میں پندرہ منٹ تک بھگونے کے لیے رکھ دیں۔ اس کے بعد اچھی طرح مسل کر سخت حصے کو نکال دیں۔ اب پیسٹ کو چہرے اور گلے پر لگائیں۔ پندرہ منٹ کے بعد چہرے اور گلے کو پانی سے صاف کریں۔ پاپ کارن مردہ خلیوں کو اچھی طرح سے نکال دیتے ہیں اور جلد کی چکنائی کو بھی ختم کر تے ہیں۔ دودھ کی کلینزنگ خاصیت جلد کو گہرائی تک جا کر صاف کرتی ہے اور جلد کو غذائیت فراہم کرتی ہے۔ اس نسخے کو ہفتہ میں دوبار استعمال کرنے سے جلد کی چکنائی کم ہوجاتی ہے۔