بھارتی شہری نے بجلی کا بل زیادہ آنے پر خود کشی کر لی

23

بھارتی ریاست مہاراشٹرا کے شہری نے بجلی کا 8 لاکھ روپے سے زائد کا بل آنے پر خود کشی کرلی۔

بھارتی میڈیا کے مطابق بھارت کی ریاست مہاراشٹرا کے علاقے اورنگ آباد میں جگن ناتھ نیہا جی شیلکے نامی شخص نے پھندا لگا کر خود کشی کرلی۔ شہری کی لاش کے قریب ایک خط ملا جس میں خود کشی کی وجہ بجلی کا زائد بل اور بجلی کی تقسیم کار کمپنی کا ہتک آمیز رویہ بتائی گئی ہے۔ شہری کو مارچ 2018 کا بل 8 لاکھ 64 ہزار روپے کا موصول ہوا تھا۔

بھارتی شہری کے خاندان نے بھارتی میڈیا کو بتایا کہ جگن ناتھ سبزی فروش ہے جس کی آمدنی نہایت قلیل ہے اور وہ ایک کمرے کے مکان میں رہائش پذیر ہے اس کے باوجود 61 ہزار ایک سو 78 یونٹس کا بل بھیجا تھا جس پر جگن ناتھ نے بار بار بجلی تقسیم کار کمپنی کے دفتر کے چکر بھی لگائے جہاں اس کی بات سننے کے بجائے اسے ذلیل کیا جاتا تھا۔ پولیس نے الیکٹرسٹی بورڈ کے خلاف مقدمہ درج کرلیا ہے۔

دوسری جانب بجلی کی تقسیم کار کمپنی کے حکام کا کہنا ہے کہ جگن ناتھ کا بل عددی غلطی کے باعث زیادہ آیا تھا جسے درست کر لیا گیا۔ شہری کا اصل بل 2800 روپے ہے۔ اس لیے شہری کی خودکشی کو کمپنی کے رویے اور زائد بل سے جوڑنا بالکل مناسب عمل نہیں ہے۔ کمپنی نے بل میں غلطی کے ذمہ داروں کا تعین کر کے تادیبی کارروائی کا آغاز کردیا ہے۔