اسلام آباد ہائیکورٹ: رمضان ٹرانسمیشن ضابطہ اخلاق کا فیصلہ معطل

19

اسلام آباد: (فلک نیوز) اسلام آباد ہائی کورٹ کے ڈویژن بنچ نے رمضان ٹرانسمیشن سے متعلق سنگل بینچ کا فیصلہ معطل کر دیا۔ عدالت نے کہا ہے کہ پیمرا کے پاس کوڈ آف کنڈکٹ پر عمل درآمد کرانے کا مکمل اختیار موجود ہے۔ ہائی کورٹ ریگولیٹر کا کردار ادا نہیں کر سکتی۔

جسٹس عامر فاروق اور جسٹس محسن اختر کیانی پر مشتمل بنچ نے مغرب کی اذان سے قبل اشتہارات نہ چلانے کا حکم بھی معطل کر دیا۔ عدالت نے درود شریف اور ملکی سلامتی کی دعائیں چلانے کا حکم اور ضابطہ اخلاق عمل درآمد کیلئے وزارتِ داخلہ کی کمیٹی بھی غیر قانونی قرار دے دی۔

فیصلے میں کہا گیا ہے کہ ہائی کورٹ کسی بھی طرح ریگولیٹر کا کردار ادا نہیں کر سکتی۔ پیمرا ریگولیٹر ہے، وہ ہی چینلز کو اپنے ضابطہ اخلاق کا پابند بنائے۔

اسلام آباد ہائی کورٹ نے حکم دیا کہ چینلز رمضان کے تقدس کو مد نظر رکھتے ہوئے خود اقدامات اٹھائیں۔ اسلام آباد ہائی کورٹ کے جسٹس شوکت عزیز صدیقی کے فیصلے کو نجی ٹی وی چینلز اور پاکستان براڈ کاسٹنگ ایسوسی ایشن نے چیلنج کیا تھا۔