اسلام آباد ہائیکورٹ نے مزید 4 اضلاع کی حلقہ بندیاں کالعدم قرار دیدیں

52

ہائی کورٹ نے مزید 4 اضلاع کی حلقہ بندیاں کالعدم جب کہ 9 اضلاع کی حلقہ بندیوں کے خلاف درخواستیں مسترد کردیں۔

فلک نیوز کے مطابق اسلام آباد ہائی کورٹ کے جسٹس عامر فاروق نے 13 اضلاع کی حلقہ بندیوں کے حوالے سے فیصلے سناتے ہوئے 4 اضلاع کی حلقہ بندیاں کالعدم جب کہ 9 اضلاع کی حلقہ بندیوں کے خلاف درخواستیں مسترد کردیں تاہم ابھی 6 اضلاع کی حلقہ بندیوں کا فیصلہ آنا باقی ہے۔

جن اضلاع کی حلقہ بندیاں کالعدم قرار دی گئی ہیں ان میں خاران، گھوٹکی، قصور اور شیخوپورہ شامل ہیں جب کہ خانیوال، چنیوٹ، کرم ایجنسی، راجن پور، مانسہرہ، صوابی، جیکب آباد، گوجرانولہ اور عمر کوٹ کی حلقہ بندیوں کے خلاف درخواستیں مسترد کردی گئی ہیں۔ عدالت نے ہری پور، سیالکوٹ، بہاولپور، رحیم یار خان، بنوں اور چکوال کا فیصلہ محفوظ کرلیا ہے جو بعد میں سنایا جائے گا جب کہ کل مزید 31 درخواستوں پر سماعت ہوگی۔

واضح رہے کہ حلقہ بندیوں کے خلاف اسلام آباد ہائی کورٹ میں 108 درخواستیں زیرسماعت ہیں جب کہ گزشتہ روز بھی عدالت نے 4 اضلاع کی حلقہ بندیوں کو کالعدم قرار دیا تھا۔