روس کی دھمکی کے بعد آسٹریلیا نے شام میں فضائی آپریشن بند کردیے

2

روس نے شام میں امریکی اتحادی فورس کے طیاروں کو ہدف بنانے کی دھمکی دے دی جس کے بعد آسٹریلیا نے شام میں فوجی آپریشن بند کردیے ہیں۔

امریکا نے اتوار کے روز ایک شامی طیارے کو مار گرایا تھا جس کے بعد روس نے ڈونلڈ ٹرمپ انتظامیہ کو خبردار کیا کہ اب وہ شام میں امریکی طیاروں کو ہدف تصور کرے گا۔

کشیدگی بڑھنے کی وجہ سے آسٹریلیا نے شام میں داعش کے خلاف اپنے فوجی فضائی آپریشن عارضی طور پر بند کرنے کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ احتیاطی طور پر یہ اقدام کیا جا رہا ہے۔

اتوار کو شام کے جنگی طیارہ نے داعش سے لڑنے والی امریکی اتحادی فورس ایس ڈی ایف  پر بم گرایا تھا جس پر جوابی کارروائی کرتے ہوئے امریکی طیاروں نے شامی طیارے کو مار گرایا۔ شامی طیارہ گرانے پر روس نے شدید برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ وہ امریکہ کے ساتھ ’تصادم کے خطرے کو ٹالنے والے مواصلاتی رابطے‘ بھی منقطع کر رہا ہے، کیونکہ طیارہ گرانے سے قبل امریکی حکام نے روس کو آگاہ کیوں نہیں کیا۔ ادھر امریکا نے اپنے موقف میں کہا کہ اسے شام میں اپنا دفاع کرنے کا حق ہے۔

واضح رہے کہ شام میں داعش کے ٹھکانوں پر فضائی حملے کرنے والے امریکی اتحاد میں آسٹریلیا، بحرین، بلیجیئم، کینیڈا، فرانس، جرمنی، نیدرلینڈز، اردن، قطر، سعودی عرب، ترکی، متحدہ عرب امارات اور برطانیہ بھی شامل ہیں۔