لندن فلیٹ کے علاوہ بھی شریف فیملی کی کئی جائیدادیں ہیں، برطانوی اخبار کا دعویٰ

116

برطانوی اخبار نے دعویٰ کیا ہے کہ لندن فلیٹ کے علاوہ بھی برطانیہ میں شریف فیملی کی کئی جائیدادیں ہیں۔

برطانوی اخبار ڈیلی میل نے نواز شریف اور ان کے اہل خانہ کے لندن میں جائیدادوں سے متعلق چشم کشا رپورٹ شائع کی ہے۔ رپورٹ کے مطابق لندن میں ایون فیلڈ کے علاقے میں پاکستان کے امیر ترین سابق وزیراعظم نواز شریف نے چار لگژری فلیٹس کو ملا کر ایک وسیع و عریض عمارت میں تبدیل کرلیا ہے جو 1993 سے ان کے زیر استعمال ہے اور جن کی مالیت اس وقت 70 لاکھ پاؤنڈ ہے۔

نواز شریف کے ساتھ ساتھ لندن فلیٹس حسن، حسین، مریم نواز اور کیپٹن صفدر کے بھی زیر استعمال ہیں۔ نواز شریف پر لندن فلیٹس غیرقانونی پیسے سے خریدنے کا الزام ہے جب کہ یہ فلیٹس تو برطانیہ میں نواز شریف کی وسیع و عریض جائیداد کی سلطنت کا محض ایک حصہ ہیں۔ برطانوی اخبار نے ان فلیٹس کے اندرونی تصاویر بھی شائع کی ہیں جن کو دیکھ کر فلیٹس کی بجائے کسی محل کا گماں ہوتا ہے۔

شریف خاندان پر لندن فلیٹس کے علاوہ غیر قانونی پیسے سے برطانیہ کے پوش علاقوں مے فیئر، چیلسی، بلگراویا میں 21 جائیدادیں خریدنے کا الزام ہے۔ تمام جائیدادوں کی مجموعی مالیت 3 کروڑ 20 لاکھ پاؤنڈ بنتی ہے۔

رپورٹ کے مطابق شریف فیملی نے دیگر جائیدادوں سے بھی بھاری منافع کمایا ہے جن میں ون ہائیڈ پارک کا گھر بھی شامل ہے جسے حسن نواز نے 4 کروڑ 30 لاکھ پاؤنڈ میں فروخت کیا تھا۔ تاہم ان کے خلاف جاری نیب ریفرنس میں اس گھر کا تذکرہ نہیں۔ برطانیہ میں شریف فیملی کی جائیدادوں کا سراغ لگانا آسان نہیں کیونکہ ان پراپرٹیز کو کمپنیوں، ٹرسٹس اور بینک اکاؤنٹس کے پیچیدہ جال کے ذریعے رجسٹرڈ کیا گیا ہے۔