ترکی کا داعش کمانڈر نیل پرکاش کو آسٹریلیا کے حوالے کرنے سے انکار

246

ترکی عدالت نے داعش کمانڈر نیل پرکاش کی آسٹریلیا حوالگی کی درخواست کو مسترد کرتے ہوئے اس کے خلاف مقدمات کی سماعت ترکی میں ہی کرنے کا حکم دیا ہے۔

بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق آسٹریلیا نے ترکی میں قید اپنے مطلوب ترین دہشت گرد نیل پرکاش المعروف ابو خالد الکمبوڈی کی حوالگی کے لیے ترک حکومت سے رجوع کیا تھا تاہم ترک عدالت نے آسٹریلیا کی درخواست مسترد کرتے ہوئے ابو خالد الکمبوڈی کے خلاف مقدمات کی سماعت ترکی میں ہی کرنے کی ہدایت کی ہے۔

آسٹریلوی حکومت نے ترکی کی عدالت کے فیصلے کو مایوس کن قرار دیتے ہوئے موقف اختیار کیا ہے کہ ابو خالد ایک آسٹریلوی شہری ہے جس پر دہشت گردی سمیت متعدد مقدمات قائم ہیں جن کی تفتیش کے لیے ابو خالد الکمبوڈی کی حوالگی ضروری ہے جس کے لیے آسٹریلوی وزیراعظم نے گزشتہ برس مئی میں ترک حکومت سے استدعا کی تھی۔

واضح رہے کہ داعش کمانڈر نیئل پرکاش آسٹریلوی شہری ہے جس کے والد کا تعلق فجی اور والدہ کا کمبوڈیا سے تھا۔  2012 میں کمبوڈیا کے دورے دوران اس نے بدھ ازم ترک کر کے اسلام قبول کیا تھا اور ابو خالد الکمبوڈی کے نام سے داعش کے لیے کام شروع کیا تاہم 2016 میں شام کی سرحد عبور کر کے ترکی میں داخل ہونے کی کوشش کے دوران گرفتار ہو گیا تھا۔