نواز شریف کی طبیعت بگڑ گئی، ہسپتال منتقل کرنے کے انتظامات مکمل

20

اسلام آباد: (فلک نیوز) اڈیالہ جیل میں طبعیت بگڑنے کی وجہ سے سابق وزیرِاعظم نواز شریف کو پمز ہسپتال منتقل کرنے کے انتظامات مکمل کر لیے گئے ہیں۔

فلک نیوز کے ذرائع کے مطابق سابق وزیرِاعظم نواز شریف نے ہسپتال منتقل ہونے کیلئے اپنے معالج کا مشورہ مان لیا ہے۔ ڈاکٹر عدنان نے اڈیالہ جیل میں نواز شریف کا معائنہ کیا اور انھیں ہسپتال منتقل ہونے کا مشورہ دیا جسے سابق وزیرِاعظم نے قبول کرتے ہوئے اس پر عمل کرنے کا فیصلہ کیا۔

فلک نیوز ذرائع کے مطابق حکومت نے سابق وزیرِاعظم کو ہسپتال منتقل کرنے کے تمام انتطامات مکمل کر لیے ہیں، انھیں آج ہی اڈیالہ جیل سے پمز ہسپتال منتقل کر دیا جائے گا۔ اس سلسلے میں پمز ہسپتال کا فرسٹ فلور خالی کروا لیا گیا ہے اور ڈاکٹر سمیت طبی عملے کو الرٹ کر دیا گیا ہے۔

نگران وزیر داخلہ شوکت سلطان نے دنیا نیوز کو بتایا کہ ڈاکٹروں کی سفارش پر نواز شریف کو پمز ہسپتال منتقل کرنے کا فیصلہ کیا، ڈاکٹروں کے مطابق نواز شریف کی ای سی جی ٹھیک نہیں آئی۔

خیال رہے کہ منی لانڈرنگ کیس میں سزا یافتہ سابق وزیرِاعظم نواز شریف کی طبیعت خراب ہونے پر ڈاکٹروں نے انھیں ہسپتال منتقل کرنے کی تجویز دی تھی۔ بتایا گیا ہے کہ نواز شریف کے بازو اور سینے میں تکلیف ہے جبکہ بلڈ ٹیسٹس میں بھی کلاٹس کی نشاندہی ہوئی۔ آئی جی جیل خانہ جات نے اس سلسلے میں ایڈیشنل چیف سیکرٹری داخلہ نسیم نواز سے رابطہ کیا اور نگراں وزیراعلیٰ کو رپورٹ ارسال کی۔