صدارتی امیدوار: ن لیگ کو اعتزاز احسن پر اعتراض، پیپلز پارٹی ڈٹ گئی

16

اسلام آباد: (فلک نیوز) صدارتی امیدوار کون ہو گا؟ اس معاملے پر اپوزیشن ابھی تک فیصلہ نہیں کر سکی ہے۔ ن لیگ کو اعتزاز احسن کے نام پر اعتراض ہے جبکہ پیپلز پارٹی اپنی نامزدگی پر ڈٹ گئی ہے۔

جمعیت علمائے اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے مسلم لیگ ن کے صدر شہباز شریف کو ٹیلی فون کر کے پیپلز پارٹی کے موقف سے آگاہ کرتے ہوئے بتایا۔ ذرائع کے مطابق آصف علی زرداری نے صدارتی امیدوار کیلئے چودھری اعتزاز احسن کا نام واپس لینے سے انکار کر دیا ہے۔

دوسری جانب دنیا نیوز ذرائع کے مطابق اپوزیشن کی جانب سے مشترکہ صدارتی امیدوار کی نامزدگی کیلئے مسلم لیگ ن نے پیپلز پارٹی سے متبادل نام مانگ لئے ہیں۔

ذرائع کے مطابق مسلم لیگ ن نے میاں رضا ربانی اور یوسف رضا گیلانی کے نام تجویز کرتے ہوئے کہا ہے کہ وہ صدارتی امیدوار کیلئے ان دونوں شخصیات کی حمایت کے لئے تیار ہیں تاہم اعتراز احسن کے نام پر ہماری پارٹی کو اعتراضات ہیں کیونکہ وہ ہماری قیادت کے خلاف سخت زبان استعمال کرتے رہے ہیں۔

خبریں ہیں کہ ن لیگ کے صدر شہباز شریف شریف بدستور مری میں موجود ہیں اور صداری امیدوار کے معاملے پر پیپلز پارٹی کی جانب سے گرین سگنل کے منتظر ہیں۔

ادھر ذرائع کے مطابق مسلم لیگ ن صدارتی امیدوار کیلئے پیپلز پارٹی کے رہنما یوسف رضا گیلانی کے نام پر اتفاق کر سکتی ہے کیونکہ میاں نواز شریف نے یوسف رضا گیلانی کی بطور صدر کے نام پر رضامندی کا اظہار کیا ہے۔

خیال رہے کہ سوموار تک ہر صورت اپوزیشن جماعتوں کی جانب سے صدرِ پاکستان کا نام پیش کرنا ضروری ہے۔ پیپلز پارٹی کی جانب سے چودھری اعتزاز احسن کے بطور صدر اُمیدوار پر ن لیگ کو تخفطات ہیں، اگر یوسف رضا گیلانی کے نام پر اتفاق ہو گیا تو پھر ن لیگ اپنے امیدوار کے نام واپس لے لے گی۔