قراردادِ ختم نبوت ایک مقدس اسلامی و آئینی دستاویز ہے،رفاقت حقانی

9

قادیانیوں سے وفاداری نبی کریم ﷺ اور آئین پاکستان سے بغاوت اور غداری ہے،جے یو پی اٹک
فتنہ قادیانیت کی سرکوبی کے لیے امام الشاہ احمد نورانی ،عبدالستار خان نیازی و اکابرین اہل سنت کی قربانیا ں ناقابل فراموش ہیں
حکومت قادیانیت نوازی سے باز رہے وگرنہ قادیانیت نوازی ایمان ، عزت اور اقتدار کو لے ڈوبے گی،جے یو پی اٹک

اٹک (فلک نیوز )مرکز اہل سنت جامعہ حقانیہ ظاہرالعلوم رجسٹرڈ اٹک کینٹ کے زیراہتمام یوم ختم نبوت ، ماہانہ گیارہویں شریف، ایامِ حضرات فاروق اعظمؓ و عثمان غنیؓ ، یوم دفاع کے موقع پرمشترکہ اجتماع ’’سالانہ ختم نبوت سیمینار‘‘کے عنوان سے جمعیت علماء پاکستان راولپنڈی ڈویژن کے جنرل سیکرٹری اور جامعہ ھذا کے بانی و پرنسپل ممتاز عالم دین استاذ العلماء ابوطیب رفاقت علی حقانی کی زیر صدارت منعقد ہوا ، جس میں جمعیت علماء پاکستان کے ضلعی جنرل سیکرٹری علامہ نیاز حسین اعوان اور رہنماء جے یو پی علامہ ظفر اقبال حقانی، قاری محمد یاسر اعوان نے خطابات کئے جبکہ علامہ رفاقت علی حقانی نے خطبہ صدارت پیش کیا، مقررین کاکہنا تھا کہ عقیدہ ختم نبوت کا تحفظ ہمارے ایمان کی جان ہے ہر قیمت اسکا تحفظ کریں گے ،فتنہ قادیانیت کی سرکوبی کے لیے قائد ملت اسلامیہ امام الشاہ احمد نورانی ،مجاہد ملت عبدالستار خان نیازی و اکابرین اہل سنت کی لا زوال قربانیا ں ناقابل فراموش ہیں ، عقیدہ ختم نبوت کے خلاف سازشوں کو بے نقاب کرناہم سب کااسلامی اورر قومی فریضہ ہے، قراردادِ ختم نبوت ایک مقدس اسلامی و آئینی دستاویز ہے جبکہ قادیانیوں سے وفاداری نبی کریم ﷺ اور آئین پاکستان سے بغاوت اور غداری ہے،سیمینار میں حکومت سے مطالبہ کیاگیا کہ قادیانیوں کو فوج،عدلیہ اور بیورکریسی سمیت تمام کلیدی عہدوں سے ہٹایاجائے اورتعلیمی نصاب میں ختم نبوت کے اسباق شامل کئے جائیں،جمعیت علماء پاکستان کے اسلاف نے اپنے خون سے عقیدہ ختم نبوت کے گلشن کی آبیاری کی ،اس کے تحفظ کے لئے پہرہ دیتے رہیں گے،حکومت قادیانیت نوازی سے باز رہے وگرنہ قادیانیت نوازی ایمان ، عزت اور اقتدار کو لے ڈوبے گی، اس موقع پرقاضی اعجاز احمد چشتی ، قاری محمد نوید چشتی سمیت کثیر تعداد میں لوگ موجود تھے۔