پاکستان کے 162 رنز کے جواب میں بھارت کی بیٹنگ جاری

12

ایشیا کپ کے انتہائی اہم میچ میں پاکستان نے بھارت کو جیت کے لیے 163 رنز کا آسان ہدف دیا جس کے جواب میں بھارت کی بیٹنگ جاری ہے۔ 

دبئی میں کھیلے جارہے ایشیا کپ کے اہم میچ میں پاکستان کی بیٹنگ لائن مکمل طور پر ناکام ہوگئی اور 50 اوورز بھی پورے نہ کھیل سکی، قومی ٹیم 44ویں اوور میں 162 رنز پر پویلین لوٹ گئی جس کے جواب میں بھارت کی بیٹنگ جاری ہے۔

بھارت کی جانب سے کپتان روہت شرما اور شیکھر دھون نے اننگز کا پراعتماد آغاز کیا اور دونوں نے 86 رنز کی اوپننگ شراکت قائم کی ، اس دوران کپتان روہت شرما 52 رنز کی جارحانہ اننگز کھیل کر شاداب خان کا شکار بنے، ان کی اننگز میں 3 چھکے اور 6 چوکے شامل تھے۔

اس سے قبل پاکستان نے بھارت کے خلاف ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کا فیصلہ کیا تو قومی ٹیم کی جانب سے اننگز کا آغاز امام الحق اور فخرزمان نے کیا تاہم اوپنرز پر اعتماد آغاز فراہم کرنے میں ناکام رہے اور صرف 3 رنز پر 2 کھلاڑی پویلین واپس لوٹ گئے، امام الحق صرف 2 رنز جب کہ فخرزمان بغیر کوئی رن بنائے آؤٹ ہوگئے۔

شعیب ملک اور بابر اعظم کے درمیان تیسری وکٹ کے لیے 82 رنز کی اہم شراکت قائم ہوئی تاہم بابر اعظم غلط شارٹ کھیلتے ہوئے بولڈ ہوگئے، وہ 47 رنز کی اننگز کھیل کر پویلین لوٹے جس کے بعد کپتان سرفراز احمد بیٹنگ کے لیے آئے لیکن وہ توقعات کے برخلاف صرف 6 رنز کے مہمان ثابت ہوئے، کپتان کے  آؤٹ ہوتے ہی شعیب ملک بھی 43 رنز پر رن آؤٹ ہوگئے۔

ٹاپ آرڈر کی ناکامی کے بعد مڈل آرڈر نے بھی مایوس کن کارکردگی کا مظاہرہ کیا، آصف علی بھی صرف چند ہی گیندوں کے مہمان ثابت ہوئے، وہ 9 رنز بناکر پویلین لوٹے جب کہ آل راؤنڈر شاداب خان کی اننگز بھی 8 رنز تک محدود رہی۔

آل راؤنڈر فہیم اشرف نے محمد عامر کے ساتھ ملکر ساتویں وکٹ کے لیے 37 قیمتی رنز جوڑے مگر فہیم اشرف جسپرٹ بمرا کا شکار بن گئے، وہ 21 رنز ہی بناسکے جب کہ حسن علی تیسری ہی گیند پر پویلین واپس لوٹ گئے، محمد عامر آخر تک مزاحمت کرتے رہے اور 18 رنز پر ناٹ آؤٹ رہے۔

بھارت کی جانب سے بھنویشور کمار اور کیدار جادیو نے 3،3 جب کہ جسپرٹ بمرا نے 2 کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا۔