انسان کو فضاؤں کی سیر کرانے والے رائٹ برادرزکی کہانی

16

ان دونوں بھائیوں کی کامیابیاں اس طورپر باہم نتھی ہیں کہ انہیں ایک ہی عنوان کے تحت لکھا جاسکتا ہے۔ اس مضمون میں دونوں کا احوال ایک ساتھ پیش کیا جارہاہے۔ ولبرائٹ 1867ء میں انڈیانامیں میلویلی کے مقام پر پیدا ہوا۔ اس کا بھائی اورویلی رائٹ ڈیٹن (اوہیو)1871ء میں پیدا ہوا۔دونوں لڑکوں نے سکول کی اعلیٰ تعلیم حاصل کی۔ تاہم کوئی ایک بھی ڈپلومہ حاصل نہیں کرسکا۔ دونوں بھائیوں میں میکانکس کا خداداد جوہر موجود تھا۔ دونوں کی ہی انسانی پرواز کے موضوع میںدلچسپی تھی۔ 1892ء میں انہوں نے سائیکل بیچنے، مرمت اور تیار کرنے کی دکان کھولی۔ اس سے انہیں اپنی پرجوش دلچسپی، یعنی ہوا بازی سے متعلق تحقیقات کے لیے مالی امداد میسر آئی۔ انہوں نے بڑے اشتیاق سے دیگرماہرین ہوا بازی کی تحریریں پڑھیں۔ جیسے اوٹو لیلنتھل، اوکتاوچینوٹ اورسیموئل پی لانگے۔ 1899ء میں انہوں نے خود ہوا بازی کے موضوع پرکام شروع کیا۔ دسمبر1903ء تک چارسال کی محنت شاقہ کے بعد وہ بالاخر کامیابی سے ہمکنار ہوئے۔ رائٹ برادران نے پہلے گلائیڈر اڑانا سیکھا۔ انہوں نے 1899ء میں گلائیڈروں اورپتنگوں سے آغاز کیا۔ اگلے برس وہ ایک بڑے حجم کا گلائیڈر (جو ایک آدمی کا وزن سہ سکتا تھا)۔ شمالی کیرولینا میں کیٹی ہاک میں لائے اوراس کی آزمائش کی۔ یہ قابل اطمینان نہیں تھا۔ انہوں نے 1901ء میں دوسرا بڑا گلائیڈ تیار کر کے اڑایا۔ 1902ء میں تیسرا اڑایا۔ یہ تیسرا گلائیڈران کی انتہائی اہم ایجادات میں سے چند ایک پر مبنی تھا (ان کی چند ایجادات جن کااطلاق 1903ء میں ہوا، ان کے پہلے طاقتور جہاز کی نسبت اسی گلائیڈر سے وابستہ ہیں)۔ تیسرے گلائیڈر میں انہوںنے ہزار سے زیادہ کامیاب پروازیں کیں۔ اپناطاقتور ہوائی جہاز تیارکرنے سے پہلے وہ دنیا کے بہترین اورانتہائی کہنہ مشق ہواباز بن چکے تھے۔