آئرش گلوکارہ سائینڈ اوکونور نے اسلام قبول کرلیا

10

آئرش گلوکارہ سائینڈ اوکونور دائرہ اسلام میں داخل ہوگئیں جس کی اطلاع انہوں نے ٹوئٹر پر دی۔

90 کی دہائی کی مقبول ترین آئرش گلوکارہ  سائینڈ نے سوشل نیٹ ورکنگ سائٹ ٹوئٹر پر اسلام قبول کرنے کی اطلاع دیتے ہوئے کہا کہ انہوں نے اپنانام بھی تبدیل کرکے’’شوہادا ڈیوٹ‘‘کرلیاہے۔ جب کہ انہوں نے اپنے ان تمام مسلم دوستوں کا بھی شکریہ ادا کیا جنہوں نے انہیں سپورٹ کیا۔

اس کے ساتھ ہی انہوں نے لکھا کہ وہ مسلمان ہونے پر بے حد فخر محسوس کررہی ہیں، 51 سالہ گلوکارہ نے کہا کہ یہ کسی بھی ذہین نظریاتی سفر کا فطری نتیجہ ہے اور جتنے بھی صحیفے ہیں وہ سب اسلام کی طرف جاتے ہیں۔

سائینڈ کی ایک ویڈیو بھی وائرل ہورہی ہے جس میں وہ آئرش مسلم پیس اینٹی گریشن کاؤنسل کے چیئرمین شیخ ڈاکٹر عمر القادری  کے سامنے اسلام قبول کرنے کا اعلان کرتی ہوئی نظر آرہی ہیں، القادری نے یہ ویڈیو ٹوئٹر پر شیئر کرتے ہوئے لکھا سائینڈ(شوہادا) اسلام قبول کرنے کے بعد بے حد خوش ہیں۔

سائینڈ اوکونور نے اسلام قبول کرنے بعد حجاب لینا شروع کردیا ہے اور اس کا کریڈٹ بھی انہوں نے اپنی دوست کو دیتے ہوئے کہا کہ مجھے پہلی مرتبہ حجاب میری دوست نے دیا۔

واضح رہے کہ یہ پہلی بار نہیں ہے کہ سائینڈ نے اپنانام تبدیل کیا ہو بلکہ گزشتہ برس بھی انہوں نے اپنا نام قانونی طور پر تبدیل کرکے مگدا ڈیوٹ کرلیاتھا۔