پاکستان کے ساتھ میچز کھیلنے کا کوئی معاہدہ نہیں ہوا، ترجمان افغان کرکٹ بورڈ

11

برطانوی نشریاتی ادارے سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ باہمی میچز کھیلنے کا کوئی بھی معاہدہ ہوا تو اس میں سب سے پہلے افغان عوام کی خواہشات کو مدنظر رکھا جائے گا۔

افغانستان میں سوشل میڈیا پر ’نو کرکٹ ود پاکستان‘ کا ٹرینڈ چل رہا ہے، جس میں پاکستان کے ساتھ کرکٹ میچز کھیلنے کے اعلان پر افغان بورڈ کے چیئرمین عاطف مشعل کو تنقید کا نشانہ بنایا جا رہا ہے جبکہ بعض صارفین نے یہاں تک لکھ دیا ہے کہ کرکٹ میچز دوست ممالک کےساتھ کھیلے جاتے ہیں، دشمنوں کے ساتھ نہیں۔

واضح رہے کہ پاکستان اور افغانستان کرکٹ بورڈز کے سربراہان نے گذشتہ ہفتے لاہور میں ملاقات کے بعد مشترکہ پریس کانفرنس کی تھی جس میں افغانستان کو آئی سی سی کا فل ممبر بنانے کیلیے حمایت کی یقین دہانی کروائی گئی، اس کے علاوہ جولائی یا اگست میں 2 دوستانہ ٹی ٹوئنٹی میچز کھیلنے کااعلان کیا گیا تھا، افغان انڈر 19 ٹیم کے کراچی میں تربیتی کیمپ، میزبان سائیڈ سے سیریز، اے اور انڈر 16 ٹیموں کے مقابلے کروانے پر بھی اتفاق کیا گیا تھا۔ چیئرمین پی سی بی نے افغانستان کو پاکستان کا کوئی بھی سٹیڈیم بطور ہوم گراﺅنڈ استعمال کرنے کی اجازت بھی دی تھی۔