وفاق نے غیر آئینی اقدام کیا تو بھر پور مزاحمت ہوگی، خورشید شاہ

14

اسلام آباد: پیپلز پارٹی کے رہنما خورشید شاہ کا کہنا ہے کہ وزیر اطلاعات کو سندھ کے دورے سے کچھ نہیں ملا تاہم وفاق نے غیر آئینی اقدام کیا تو بھر پور مزاحمت ہوگی۔

اسلام آباد میں میڈیا سے گفتگو میں پی پی رہنما خورشید شاہ کا کہنا تھا کہ قومی حکومت کے قیام کی ضروت نہیں نہ حامی ہیں، چاہتے ہیں حکومت 5 سال پورے کرے لیکن ایسا دکھائی نہیں دیتا، یہ حکومت اپنے وزن سے خود ہی گر جائے گی، قانون ساز بیرون ملک نہیں جا رہے یہاں قانون سازی کے لئے موجود ہیں، کیا عمران خان کا نام ای سی ایل میں شامل ہے کہ وہ پارلیمنٹ نہیں آتے، حکومت بتائے 5 ماہ میں کونسی قانون سازی کی ہے۔

خورشید شاہ کا کہنا تھا کہ عمران خان ابھی تک کنٹینر پر ہی ہیں نیچے اتریں تو حقیقت کا پتہ چلے، یہ حکومت معیشت سمیت ہر شعبے میں بری طرح ناکام ہوئی ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ اپوزیشن اتحاد باہمی اعتماد پر قائم رہ سکتا ہے، ہم نے مل کر چلنے کا تہیہ کیا ہے۔

رہنما پی پی کا کہنا تھا کہ منی بجٹ کی کسی صورت حمایت نہیں کریں گے، حکومت نے پہلے 5 ماہ میں ہی ملک کو 7 ارب ڈالر کا مقروض کر دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ وزیر اطلاعات کو سندھ کے دورے سے کچھ نہیں ملا، سندھ حکومت میں کسی قسم کی کوئی تبدیلی نہیں آئے گی تاہم وفاق نے غیر آئینی اقدام کیا تو بھر پور مزاحمت ہو گی۔