علیمہ خان کے ذرائع آمدن خیرات کی رقم پر مشتمل ہونے کے الزامات،بیرون ملک جائیداد خیرات کی رقم سے نہیں بلکہ کس رقم سے بنائی؟تفصیلات جاری

11

اسلام آباد: دبئی جائیداد پر ٹیکس کے معاملہ پر علیمہ خان کے وکیل سلمان اکرم راجہ کی جانب سے بیان میں کہاگیا ہے کہ علیمہ خان کے ذرائع آمدن کسی خیرات رقم پر مشتمل نہیں، اس حوالے سے تمام افواہیں اور قیاس آرائیاں غلط ہیں ،علیمہ خان نے بیرون ملک جائیداد وراثتی جائیدادیں بیچ کر بنائیں۔جمعہ کو وزیراعظم عمران خان کی بہن علیمہ خان کے دوبئی جائیداد پر ٹیکس کے معاملہ پر علیمہ خان کے وکیل سلمان اکرم راجہ نے ایک بیان جاری کیا ہے جس میں کہاگیا ہے کہ علیمہ خان نے واجب الادا ٹیکس کا کچھحصہ ادا کر دیا ہے۔اعلامیہ کے مطابق علیمہ خان کے ذرائع آمدن کسی خیرات رقم پر مشتمل نہیں، اعلامیہ میں کہاگیا کہ اس حوالے سے تمام افواہیں اور قیاس آرائیاں غلط ہیں۔ اعلامیہ کے مطابق علیمہ خان نے بیرون ملک جائیداد وراثتی جائیدادیں بیچ کر بنائیں، اعلامیہ کے مطابق بیرون ملک جائیدادوں میں علیمہ خان کے شوہر کا بھی حصہ ہے۔اعلامیہ کے مطابق پاکستان سے پیسے بینکس کے ذریعے بھجوائے گئے، اعلامیہ کے مطابق علیمہ خان ٹیکسٹائل سے متعلق ایک کمپنی میں پچاس فیصد کی حصے دار ہیں۔اعلامیہ کے مطابق کمپنی قانونی تقاضوں کے تحت بنائی گئی۔ اعلامیہ کے مطابق بیرون ملک بینکوں سے قرضے لیئے گئے۔ اعلامیہ کے مطابق بیرون ملک جائیدادوں کی مجموعی قیمت 7.25 کروڑ روپے ہے۔  دبئی جائیداد پر ٹیکس کے معاملہ پر علیمہ خان کے وکیل سلمان اکرم راجہ کی جانب سے بیان میں کہاگیا ہے کہ علیمہ خان کے ذرائع آمدن کسی خیرات رقم پر مشتمل نہیں، اس حوالے سے تمام افواہیں اور قیاس آرائیاں غلط ہیں ،علیمہ خان نے بیرون ملک جائیداد وراثتی جائیدادیں بیچ کر بنائیں۔ جمعہ کو وزیراعظم عمران خان کی بہن علیمہ خان کے دوبئی جائیداد پر ٹیکس کے معاملہ پر علیمہ خان کے وکیل سلمان اکرم راجہ نے ایک بیان جاری کیا ہے جس میں کہاگیا ہے کہ علیمہ خان نے واجب الادا ٹیکس کا کچھ حصہ ادا کر دیا ہے۔