سابق اسکول ٹیچر نے ورلڈ چیمپئن باکسر کو دھول چٹا دی

7

29 سالہ سابق اسکول ٹیچر جیف ہارن نے ورلڈ چیمپئن باکسر مینی پیکیاؤ کو شکست دے کر دنیا بھر میں موجود باکسنگ کے شائقین کو دنگ کر دیا۔

برسبین میں ہونے والے مقابلے میں فلپائن سے تعلق رکھنے والے ورلڈ باکسنگ آرگنائزیشن (ڈبلیو بی او) کے ویلٹر ویٹ چیمپئن مینی پیکیاؤ کو فیورٹ قرار دیا جارہا تھا تاہم جیف ہارن نے 12 راؤنڈز کے اعصاب شکن مقابلے کے بعد پوائنٹس کی بنیاد پر مینی پیکیاؤ کو شکست دیکر ڈبلیو بی او ویلٹر ویٹ چیمپئن کا اعزاز اپنے نام کرلیا۔

فائٹ کے تین ججز نے اپنے متفقہ فیصلے میں آسٹریلین باکسر کو فاتح قرار دیا تاہم مینی پیکیاؤ کی ٹیم نے ججز کے فیصلے کو متنازع قرار دے دیا ہے۔ فیصلہ آنے کے بعد خود مینی پیکیاؤ نے فلپائنی ٹی وی کو انٹرویو میں کہا کہ وہ یہ سمجھ رہے تھے کہ وہ فائٹ جیت چکے ہیں، اگر یہ مقابلہ دوبارہ ہوتا ہے تو انہیں کوئی اعتراض نہیں البتہ اب یہ فائٹ فلپائن میں ہونی چاہیئے۔

واضح  رہے کہ 38 سالہ پیکیاؤ کا شمار موجودہ دور کے بہترین باکسرز میں ہوتا ہے اور ان کی ٹیم کو یقین تھا کہ وہ یہ میچ انتہائی آسانی سے اپنے نام کر لیں گے تاہم ہارن نے انہیں ناکوں چنے چبوا دیے۔ ہارن نے یہ بھی کہا کہ اگر مینی پیکیاؤ دوبارہ اکھاڑا سجانا چاہتے ہیں تو انہیں اس میں کوئی مسئلہ نہیں ہے۔ ہارن کے کیریئر کی یہ اب تک کی سب سے بڑی کامیابی ہے جبکہ 2015 میں فلائیڈ مے ویدر سے ہارنے کے بعد یہ مینی پیکیاؤ کی پہلی شکست ہے۔